مال روڈ پر احتجاج سے ٹریفک جام رہنا معمول بن گیا، شہری سراپا احتجاج

17 جون 2015

لاہور(نامہ نگار) شاہراہ قائداعظم پرمختلف تنظیموںکے مظاہروں،ریلیوں،دھرنوں احتجاج اور ٹریفک پولیس کی ناقص حکمت عملی و منصوبہ بندی کے فقدان کے باعث شہر میں ٹریفک کا بدترین جام ہونا معمول بن گیا، جس پر شہریوں نے شدید احتجاج کیا ۔تفصیلات کے مطابق ٹریفک جام ہونے کی صورت میں وارڈنز ٹریفک متبادل راستوں پر چلانے کی بجائے اس طرف آنے والے تمام راستوں کو رکاوٹیں اور بیر ئیر لگاکربند کردیتے ہیں۔جس کے باعث ٹریفکگھنٹوں پھنسی رہتی ہے۔گز شتہ روز شاہراہ قائداعظم اور جیل روڈ پر احتجاجی مظاہروں کی وجہ سے سارادن ٹریفک بلاک رہی۔جس سے شاہرہ قائد اعظم،شاہراہ فاطمہ جناح ، جیل روڈ،کینال روڈاور اس سے ملحقہ راستوں پر گاڑیوں کی لمبی لائنیں لگ گئیں۔ شہری سار دن ٹریفک میں پھنسے رہے ۔ ٹریفک میں پھنسی ایمبولینس بھی چیخ وپکار کرتی رہیں جس پرشہری ٹریفک پولیس کے فسران و وارڈنز کو ان کی ناقص کاررکردگی پر کوستے رہے ۔ شہریوںنے شدید احتجاج کرتے ہوئے اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا کہ شاہراہ قائداعظم پر کسی کو احتجاج کی اجازت نہ دی جائے اور وزیر اعلیٰ پنجاب اس صورتحال کا نوٹس لیں دریں اثناء چیئرمین مسائل کمیٹی ناظم شوکت اور دیگر شہریوں نے بھی ٹریفک نظام بہتر بنانے کا مطالبہ کیا۔