بجٹ میں تعلیم کیلئے مختص رقم میں اضافہ کیا جائے: ادیب جاودانی

17 جون 2015

لاہور (لیڈی رپورٹر) آل پاکستان پرائیویٹ سکولز مینجمنٹ ایسوسی ایشن کے مرکزی صدر ادیب جاودانی نے کہا ہے کہ تعلیم کے لئے مختص کئے جانے والے مجموعی ملکی پیداوار جی ڈی پی کا چار فیصد محض ایک خواب بن کر رہ گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت70 لاکھ بچے پرائمر ی تعلیم اور ڈیڑھ کروڑ بچے ہائی سکول جانے سے محروم ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی ہر حکومت نے پاکستان کو پڑھا لکھا بنانے کے صرف دعوے ہی کیے ہیں لیکن عملی طور پر کچھ نہیں کیا ۔ وفاقی حکومت کو بجٹ میں پرائیویٹ تعلیمی اداروں پر عائد ٹیکسز کو ختم کرنا چاہیے تھا۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ بجٹ میں تعلیم کیلئے مختص کی گئی رقم میں اضافہ کیا جائے۔