یک روز تیزی کے بعد سٹاک مارکیٹ میں شدید مندا‘ سرمایہ کاروں کو 25 ارب روپے سے زائد خسارہ

17 جون 2015

کراچی+لاہور (مارکیٹ رپورٹر+ کامرس رپورٹر)کراچی اسٹاک ایکس چینج میں کاروباری ہفتے کے دوسرے روز منگل کواتارچڑھاؤ کے بعد مندا اور کے ایس ای 100انڈیکس 34700اور 34600کی نفسیاتی حدوں سے گرگیا۔سرمایہ کاری مالیت میں 25ارب 99 کروڑ روپے سے زائد کی کمی ہوئی کاروباری حجم گذشتہ روز کی نسبت7.57فیصدکم رہا۔ جبکہ55.49فیصد حصص کی قیمتوں میںکمی ریکارڈ کی گئی۔ تفصیلات کے مطابق حکومتی مالیاتی اداروں،مقامی بروکریج ہاؤسز اور دیگر انسٹی ٹیوشنز کی جانب سے توانائی ،بینکنگ اور سیمنٹ سیکٹر میں خریداری کے باعث کاروبار کا آغاز مثبت زون میں ہوا ٹریڈنگ کے دوران ایک موقع پر کے ایس ای 100 انڈیکس 34738پوائنٹس کی بلند سطح پر بھی ریکارڈ کیا گیا تاہم سیاسی افق پر چھائی بے چینی اور مسلم لیگ (ن) اور ایم کیو ایم کے درمیان جاری سیاسی کشمکش کے باعث سرمایہ کار گروپ تذبذب کا شکار نظر آئے اور انہوں نے اپنے حصص فروخت کرنے کو ترجیح دی جس کے باعث تیزی کے اثرات زائل ہوگئے ۔ کے ایس ای 100 انڈیکس 193.99 پوائنٹس کمی سے 34516.30 پوائنٹس پر بند ہوا ۔ سرمایہ کاری مالیت میں 25ارب 99 کروڑ 47 لاکھ 78 ہزار 415روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی جبکہ سرمایہ کاری کی مجموعی مالیت گھٹ کر 74 کھرب 37 ارب 31 کروڑ 51 لاکھ 27 ہزار 956روپے ہوگئی۔ دریں اثناء لاہور سٹاک ایکسچینج میں بھی مندے کا رجحان رہا۔ 75کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا۔ 15کمپنیوں کے حصص میں اضافہ ہوا۔ 15کمپنیوں کے حصص میں کمی ہوئی جبکہ45کمپنیوں کے حصص میں استحکام رہا۔ ایل ایس ای 25 انڈیکس51.78 پوائنٹس کی کمی کے ساتھ 5981.16 بندہوا۔ مارکیٹ میں کل18 لاکھ7 ہزار حصص کا کاروبار ہو ا۔