محاصل، اخراجات کا تخمینہ برابر، متوازن بجٹ پیش کیا: وزیرخزانہ خیبر پی کے

17 جون 2015

پشاور(آن لائن)وزیر خزانہ خیبر پی کے مظفر سید نے کہا ہے آئندہ مالیسال کے بجٹ میں پاک چائنہ اقتصادی راہداری سمجھوتے کے تحت کل انیس منصوبوں کو پی ایس ڈی پی میں شامل کرنے کیلئے وفاقی حکومت سے سفارش کی ہے جن میں انرجی اینڈ پاور کے دس منصوبے ،آبپاشی کے آٹھ اور سوات ایکسپریس وے کی تعمیر کا منصوبہ شامل ہے ان منصوبوں کی کل مالیت 5320ملین ڈالر ہے۔ ان کی تکمیل سے صوبے کو اضافی سترہ سو میگاواٹ بجلی ملنے کے ساتھ تین لاکھ ایکڑ اراضی کی سیرابی کیلئے پانی فراہم ہو گا جس سے نہ صرف صوبے کی معیشت بہتر ہو گی بلکہ روزگار کے مواقع بھی بڑھیں گے ۔ پوسٹ بجٹ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے مزید کہا کہ کل محاصل کا تخمینہ 487ارب88کروڑ40لاکھ روپے ہے جو رواں مالی سال کی نسبت تقریباً اکیس فیصد زیادہ ہے ۔اخراجات کا تخمینہ بشمول سالانہ ترقیاتی پروگرام بھی 487ارب88کروڑ40لاکھ روپے لگایاگیا ہے اس طرح یہ ایک متوازن بجٹ ہے ۔انہوں نے کہا کہ سالانہ ترقیاتی پروگرام کا کل حجم174ارب88کروڑ40لاکھ روپے ہے جس میں 32ارب88کروڑ40لاکھ روپے بیرونی امداد بھی شامل ہے ۔سالانہ ترقیاتی پروگرام پچھلے سال کے مقابلے میں چھبیس فیصد زیادہ ہے ۔آئندہ مالی سال کا صوبائی ترقیاتی پروگرام142ارب روپے پر محیط ہے جو کہ رواں مالی سال کے منظور شدہ تخمینے سے بیالیس فیصد زیادہ ہے ۔اسی طرح صوبائی پروگرام1525منصوبوں پر مشتمل ہے جن میں 911جاری اور 614نئے منصوبے شامل ہیں ۔