بائیومیٹرک سسٹم سے عام انتخابات درخواست کے قابل سماعت ہونے پر مزید دلائل طلب، سپریم کورٹ میں جمع‘ رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت

17 جون 2015
بائیومیٹرک سسٹم سے عام انتخابات درخواست کے قابل سماعت ہونے پر مزید دلائل طلب، سپریم کورٹ میں جمع‘ رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت

لاہور (وقائع نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے بائیو میٹرک نظام کے ذریعے عام انتخابات کرانے کے لئے درخواست کے قابل سماعت ہونے سے متعلق مزید دلائل طلب کرلئے۔ جسٹس اعجازالاحسن نے کیس کی سماعت کی۔ درخواست گزار نے موقف اختیار کیا کہ عام انتخابات میں بائیو میٹرک نظام نہ ہونے سے اگلے انتخابات تک دھاندلی کا شور اٹھتا ہے۔ دھاندلی سے ملک میں دھرنوں اور احتجاج کا کلچر پروان چڑھا ہے حکومت کو احتجاج کے دوران سکیورٹی فراہم کرنے کے لئے اربوں روپے صرف کرنا پڑتے ہیں اگر یہی رقم بائیو میٹرک نظام متعارف کرانے پر لگا دی جائے توملک سے دھاندلی کا خاتمہ یقینی بنایا جا سکتا ہے۔ عدالت نے بائیو میٹرک نظام کے حوالے سے سپریم کورٹ میں جمع کرائی گئی رپورٹ پیش کرنے کی ہدائت کرتے ہوئے کیس کے قابل سماعت ہونے سے متعلق دلائل طلب کر لئے۔