بھارت چاہتا ہے پاک چین راہداری منصوبہ ناکام ہو، دشمنان اسلام کے منصوبے بے نقاب کرینگے: حافظ سعید

17 جون 2015
بھارت چاہتا ہے پاک چین راہداری منصوبہ ناکام ہو، دشمنان اسلام کے منصوبے بے نقاب کرینگے: حافظ سعید

لاہور (خصوصی نامہ نگار)مذہبی و سیاسی جماعتوں کے قائدین، جید علماء کرام اور دانشور حضرات نے ملکی سلامتی کے دفاع اور نظریہ پاکستان کے احیاء کیلئے ملک گیر تحریک چلانے کا اعلان کیا ہے اورکہا ہے کہ اس تحریک میں قوم کے ہر طبقہ کو شامل کیا جائے گا۔ امریکہ اور اس کے اتحادی خطہ میں ناکامی کے بعد بھارت سے کوئی بڑا کام لینا چاہتے ہیں۔ وہ پاک چین راہداری منصوبہ ناکام بنانے کیلئے چترال، گلگت بلتستان میں تشویش کھڑی کرنا چاہتا ہے۔ امریکی دبائو پر ایسی این جی اوز کو مذموم سرگرمیاں جاری رکھنے کی اجازت دینا ملکی سلامتی کیلئے سخت نقصان دہ ہے۔ ملک سے مذہبی تشدد، اندرونی خلفشار اور قتل و غارت گری کا خاتمہ انتہائی ضروری ہے۔ 20کروڑ پاکستانی عوام بھارتی جارحیت کا منہ توڑ جواب دینے کیلئے ہمہ وقت تیار ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز مرکز القادسیہ چوبرجی میں ’’سانحہ مشرقی پاکستان اور بھارتی کردار‘‘ کے موضوع پر ہونے والے ایک بڑے کنونشن سے خطاب میں کیا۔ کنونشن میں امیر جماعۃ الدعوۃ حافظ محمدسعید، سابق وزیر خارجہ سردار آصف احمد علی، لیاقت بلوچ، حافظ عبدالرحمن مکی، علامہ ابتسام الہٰی ظہیر، علامہ زبیر احمدظہیر، حافظ عبدالغفار روپڑی، سیدہ آسیہ اندرابی، پیر سید ہارون گیلانی، سردار شام سنگھ، سجاد میر، ڈاکٹر اجمل نیازی، رانا محمد عظیم، قاری محمد یعقوب شیخ، مولانا سیف الدین سیف، جمیل احمد فیضی ایڈووکیٹ و دیگر نے خطاب کیا۔ حافظ محمد سعیدنے اپنے خطاب میںکہاکہ بیرونی قوتیں پاک چین اقتصادی راہداری منصوبہ ناکام کرنے کیلئے گلگت، بلتستان، چترال میں تشویش کھڑی کرنا اور یہاں تحریکیں کھڑی کر کے اپنے مکروہ عزائم مکمل کرنا چاہتی ہیں۔ بھارت چاہتا ہے کہ پاک چین راہداری منصوبہ ناکام ہو اور وہ چترال کے ذریعہ افغانستان اور پھر وسط ایشیا تک پہنچ سکے۔ سیو دی چلڈرن نامی این جی او جس پر پابندی لگائی گئی ہے وہ چترال میں ملک دشمن سرگرمیاں سرانجام دے رہی تھی۔ اسی طرح اور بھی کئی این جی اوز ہیں جو ملکی سلامتی کو نقصان پہنچانے کیلئے خطرناک کھیل کھیل رہی ہیں۔ ہم پورے پاکستان میں لوگوں کا شعور بیدا ر کریںگے اور دشمنان اسلام کے منصوبے بے نقاب کریں گے۔ چین کو بھی اپنے معاشی منصوبے مکمل کرنے کیلئے ایک پرامن اور محفوظ پاکستان چاہیے۔ ملکی دفاع کا مضبوط ہونا بہت ضروری ہے، اس پر سیاست نہیں ہونی چاہئے۔ انہوںنے کہاکہ نریندرمودی سوائے پاکستان کو تباہی سے دوچار کرنے کے اورکوئی ایجنڈا نہیں رکھتا۔ کشمیریوں کو بہت مایوس کر لیا اب مزید نہیں کرنا چاہیے اب مصلحتیں چھوڑ دیں۔ سابق وزیر خارجہ سردار آصف احمد علی نے کہاکہ نریندرمودی مسلمانوں کے خون سے ہولی کھیل کر بھارت کا لیڈر بنا۔ ہندو بنئے کی فطرت کو سمجھنا بہت ضروری ہے۔لیاقت بلوچ نے کہاکہ بھارتی وزیر اعظم نے پاکستان کو دولخت کرنے اور مکتی باہنی کی مدد کااعتراف کیا۔وہ ہر ہمسایہ ملک کے ساتھ ظلم کر رہا ہے۔کشمیر میںمظالم جاری ہیں لیکن کشمیری بھارت کی بالا دستی قبول کرنے کو تیار نہیں۔ پروفیسر حافظ عبدالرحمان مکی نے کہاکہ سانحہ مشرقی پاکستان اور بھارتی دھمکیوں کے خلاف ملک گیر تحریک چلائیں گے۔ نظریہ پاکستان کا تحفظ اور بھارت سے اس کے جرائم کا حساب لینا پاکستان پر قرض ہے۔ ابتسام الٰہی ظہیر نے کہا کہ مودی نے پاکستان کو دولخت کرنے کا اعتراف کر کے اس بات کا ثبوت دیا کہ عالم کفر ایک ملت ہے وہ مسلمانوں کے کبھی دوست نہیں ہوسکتے۔ آسیہ اندرابی نے ٹیلی فونک خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جب سے پاکستان بنا بھارت نے اسے تسلیم نہیں کیا بلکہ اس کے خلاف سازشیں کیں۔ پاکستان کا بچہ بچہ اپنے خون سے ملک کی حفاظت کرے گا۔ حافظ عبدالغفار روپڑی نے کہا کہ جرم کے اعتراف کے بعد سزا لازم ہوتی ہے، مودی کو سزا ملے گی۔ سردار شام سنگھ نے کہا کہ قائداعظم محمد علی جناح کی جدوجہد سے ملک پاکستان بنا۔ کانگریس نے اس وقت بھی پاکستان کو تسلیم نہیں کیا تھا اب بھی نہیں کر رہے۔کچھ غلطیاں ہماری اپنی قوم کی بھی ہیں۔ سجاد میرنے کہاکہ نریندر مودی کا وزیراعظم بننا ہندوستان کے لئے عذاب ہے۔ ڈاکٹر اجمل نیازی نے کہا کہ پاکستان سے بھارت کو جنرل راحیل شریف اور حافظ محمد سعید کے علاوہ کوئی جواب نہیں دے رہا۔