سلمان بٹ نے میچ فکسنگ میں ملوث ہونے کا اعتراف کر لیا

17 جون 2015

لاہور(سپورٹس رپورٹر/نمائندہ سپورٹس) پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین شہریار خان نے کہا ہے کہ عہدے سے مستعفی نہیں ہو رہا، دو ماہ بعد پاکستان کرکٹ بورڈ میںاہم تبدیلیاں دیکھنے کو ملیں گی۔ بھارتی ٹیم پاکستان کے ساتھ دسمبر میں سیریز نہیں کھیلتی تو پی سی بی کے پاس پلان بی موجود ہے جس کا اعلان نہیں کیا جا سکتا۔ ڈومیسٹک کرکٹ کا معیار بہتر کرنے کیلئے فارمیٹ میں تبدیلی ضروری ہے۔ ڈومیسٹک کرکٹ میں کھلاڑیوں کی ناقص فٹنس پر کوچز بھی جواب دے ہوا کرینگے۔ قذافی سٹیڈیم میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے چیئرمین پی سی بی کا کہنا تھا کہ کرکٹ اور سیاست کو ایک ساتھ نہ جوڑا جائے۔ بھارتی ٹیم اگر اپنے سیاسی حالات کی وجہ سے پاکستان کے ساتھ سیریز نہیں کھیلتی تو یہ اس کی مرضی ہے ہم اسے پاکستان کے ساتھ سیریز کھیلنے کی دعوت دیتے رہیں گے ۔ سابق کپتان سلمان بٹ نے میچ فکسنگ کا عتراف کر لیا ‘ ان کا کیس آئی سی سی اینٹی کرپشن یونٹ کو بھجوا دیا ہے‘جواب کے بعد انہیں ری ہیبلیٹیشن کے عمل سے گزارا جائے گا۔ پاکستان کی پہلی سپر لیگ مالی فائدہ حاصل کرنے کے لئے دبئی میں کرائی جا رہی ہے۔ ٹاپ کھلاڑی شرکت نہیں کرینگے تو سپانسر نہیں آئیں گے۔ سنٹرل کنٹریکٹ کو جان بوجھ کر ایشو بنایا جا رہا ہے۔ کھلاڑیوں کو چھ ماہ کا سنٹرل کنٹریکٹ دیدیا گیا ہے جبکہ اگلی مدت کے لئے کھلاڑیوں کو سنٹرل کنٹریکٹ کا کا معاہدہ دیدیا گیا ہے جس پر وہ دورہ سری لنکا کے دوران یا اس کے بعد دستخط کر دینگے۔ پاکستان ڈومیسٹک کرکٹ میں تبدیلی لانا چاہتے ہیں تاکہ اچھے کرکٹر سامنے آ سکیں۔ ڈومیسٹک کرکٹ کے کھلاڑیوں کا فٹنس معیار دیکھ کر انتہائی افسوس ہوا 20 میں سے صرف 6 کھلاڑی فٹنس معیار پر پورا اتر سکے جبکہ 14 کھلاڑی فٹنس ٹیسٹ پاس نہیں کر سکے ہیں۔