گالم گلوچ کی سیاست پاکستان برداشت نہیں کرسکتا،تمام جمہوری جماعتوں سے نئے میثاق جمہوریت پر بات کیلئے تیار ہیں، بلاول بھٹو

Jul 17, 2018 | 14:19

ویب ڈیسک

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ تمام جمہوری جماعتوں سے نئے میثاق جمہوریت پر بات کرنے کے لیے تیار ہیں، میثاق جمہوریت کے حوالے سے نواز شریف اور شہباز شریف کے ساتھ ہمارا تجربہ تلخ رہا، پارلیمنٹ میں آنے والے سیاسی قائدین بنیادی اصولوں پر سمجھوتہ نہ کریں،ہمارے خلاف کٹھ پتلی اتحاد پہلے بھی مختلف ناموں سے سامنے آتے رہے، ہربار ان کا سامنا کیا، اس بار بھی انہیں شکست دینگے، جو ظلم و زیادتی میرے والد نے نوازشریف کے دور میں سہی، نہیں چاہتا وہی سب شریف خاندان کے ساتھ ہو۔منگل کو یہاں پریس کانفرنس کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ عوام پیپلزپارٹی کا نظریہ قبول کرتے ہیں، اس کا نتیجہ 25 جولائی کو سامنے آئے گا،میری توجہ عوام کے مسائل اور پارٹی منشور پر رہی ہے، میرا پہلا الیکشن ہے، انتخابی مہم بھی چلارہا ہوں، میں عوام میں بی بی شہید کا مشن لے کر نکلا ہوں۔ بلاول نے کہا کہ ایک الیکشن کی بات نہیں، یہ مشن جاری رہے گا، محنت سے نہیں ڈرتا، نتائج کے لیے محنت ضروری ہے، گالم گلوچ بریگیڈ کی سیاست پاکستان برداشت نہیں کرسکتا۔انہوں نے کہا کہ گالم گلوچ اور نفرت کی سیاست کو مرکزی دھارے میں لائیں گے تو نوجوان سمجھیں گے کہ اسی طرح کرنا ہے، نوجوانوں کو یہ پیغام دینا چاہتا ہوں کہ مثبت کردار ادا کریں۔چیئرمین پی پی پی نے کہا کہ الیکشن کے بعد وزیراعظم کا فیصلہ ہوگا، پیپلزپارٹی کی حکومتوں نے ریاست اور معیشت کو مستحکم کیا، پی پی پی ملک کی وہ سیاسی جماعت ہے جو تمام مسائل کا سامنا کرسکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سندھ میں سیاسی اتحاد حقیقی خطرہ ہوتا تو سامنے آکر مقابلہ کرتا، ہمارے خلاف کٹھ پتلی اتحاد پہلے بھی مختلف ناموں سے سامنے آتے رہے، ہربار ان کا سامنا کیا، اس بار بھی انہیں شکست دینگے ۔انہوں نے کہا کہ ملک سے بھوک مٹا ﺅ، غربت اور روزگار پر بھی انتخابی مہم میں شامل ہے اس کے علاوہ روٹی کپڑا مکان کے نعرہ کے ساتھ پالیسی پر بھی زور ہے مگر ہم لوگ پچھلے کئی سالوں سے مسائل اور چیلنجز کا سامنا کررہے ہیں جس کی وجہ ناقص معاشی پالیسیاں ہیں۔ آپ نوازشریف سے جیل میں ملاقات کرنے جائیں گے کے جواب میں بلاول بھٹو نے کہا کہ کوئی ارادہ نہیں، ساتھ ہی بلاول بھٹو نے میاں نواز شریف کو جیل میں بنیادی سہولیات فراہم کرنے کا بھی مطالبہ کیا۔

مزیدخبریں