سی ڈی اے کا اوورسیز پاکستانیوں کے مجوزہ سیکٹر کیلئے سروے مکمل،50ارب آمدن ہوگی

17 جولائی 2017

اسلام آباد ( وقائع نگار)وفاقی ترقےاتی ادارے ( سی ڈی اے ) کی انتظامےہ نے اسلام آباد مےں اوورسےز پاکستانےوں کے مجوزہ سےکٹر کے ٹوپو گرافےکل سروے مکمل کرلےے بےرون ملک مقےم پاکستانےوں کے لےے تجوےز کردہ سےکٹر کے لےے 11ہزار کےنال اراضی کے سروے کےے گئے ہےں جو پارک روڈ پر واقع اور سی ڈی اے کے اےکوائر شدہ ہے ۔ ذرائع کے مطابق وفاقی ترقےاتی ادارے ( سی ڈی اے ) کی انتظامےہ نے وفاقی حکومت کی جانب سے رواں سال کے بجٹ مےں اوورسےز پاکستانےوں کے لےے اعلان کر دہ ہاوسنگ سکےم پر عملی طور پر کام شروع کردےا ہے اور اس ضمن مےں سی ڈی اے کے شعبہ لےنڈ نے ابتدائی طورپر اس سےکٹر کی ٹو پو گرافےکل سروے کروالےے ہےں جس کے مطابق پارک روڈ پر واقع سی ڈی اے کی ہی اےکوائر شدہ تقرےباً11ہزار اکےنال اراضی کو اس مقصد کے لےے منتخب کےا گےا ہے جو اےکوائر شدہ ہے اور اس اراضی پربہت ہی کم بلٹ اپ موجود ہے سی ڈی اے کے اےک سنےئر آفےسر کے مطابق بلٹ اپ پراپر ٹی کے تعےن کے لےے ابھی سے گوگل امےجنگ کا کام بھی مکمل کےا گےا ہے تاکہ مستقبل قرےب مےں ہونے والی کسی بھی سرگرمی کو باقاعدہ مانےٹر کےا جاسکے واضح رہے کہ وفاقی حکومت نے سی ڈی اے کو اسلام آباد مےں بےرون ملک مقےم پاکستانےوں کے لےے اےک خالصتاًسےکٹر شرو ع کرنے کی ہداےت کی تھی جس پر سی ڈی اے نے ابھی کام شروع کےا ہے سی ڈی اے حکام کا خےال ہے کہ اس سےکٹر کی کامےاب لانچنگ کی صورت مےں وفاقی ترقےاتی ادارے کو 50ارب روپے کی آمدن متوقع ہے تاہم سی ڈی اے کے ان دعووں کے برعکس وفاقی ترقےاتی ادارے کے کم و بےش 7سےکٹرز اےسے ہےں جو گزشتہ 25سالوں سے التواءکا شکار ہےں اور سوک باڈی کی انتظامےہ ان سےکٹرز کے الاٹےوں سے اربوں روپے وصول کرنے کے باوجود تاحال ان کو ڈوےلپ نہےں کرسکی ہے اور نہ ہی الاٹےوں کو قبضہ مل سکا ہے ۔