نوازشریف کے پاس استعفیٰ کے سوا اب کوئی راستہ نہیں بچا، بلاول بھٹو

17 جولائی 2017

ہری پور(نامہ نگار) پیپلزپارٹی نے جمہوریت کوبچانے کے لیے نعرے نہیں لگائے بلکہ اپنی جانیں کٹواکردفاع کیاہے آئندہ بھی جمہوریت کی بقاءکے لیے پیپلزپارٹی قربانی دینے کے لیے فرنٹفٹ پرکھیلے گی جمہوریت اورکرپشن ساتھ ساتھ نہیں چل سکتے میاں صاحب فی الفورمستعفی ہوکرجمہوریت کوبچائیں، ان خیالات کااظہارگزشتہ روزپاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹوزرداری نے پی پی پی صوبائی صدرکے پی کے ہمایوں خان کی قیادت میں ملنے والے وفدسابق وزیراعجازعلی خان درانی ،صوبائی سیکرٹری فیصل کریم کنڈودیگرسے گفتگو کے دوران زرداری ہاﺅس اسلام آبادمیں کیاچیئرمین پی پی پی نے کہاکہ ہم نے ہمیشہ اداروں کااحترام کیاہے اورکبھی بھی کسی ادارے پرناجائزتنقیدنہیں کی یہاں تک کہ پیپلزپارٹی کے چیئرمین کاجوڈیشل مرڈرتک ہواایک وزیراعظم کوگھربیچ دیاگیالیکن جمہوریت کی بقاءاوراداروں کی مضبوطی کے لیے ہرفیصلے کوتسلیم کیامیاں نوازشریف دوسروں کومشورہ تودےتے تھے لیکن آج اپنی باری آگئی تواداروں کوگالیاں دیناشروع کردیں لیکن استعفیٰ کے علاوہ میاں نوازشریف کے پاس اب کوئی راستہ نہیں بچا،پی پی پی کے چیئرمین نے صوبائی وفدکوہدایات جاری کی کہ کے پی کے میں پارٹی کونئے سرے سے فعال کیاجائے اورپرانے ودیرینہ کارکنوں اوررہنماﺅں کااعتمادمیں لے کرنئے جذبے کے ساتھ جدوجہدکی جائے انہوں نے مزیدکہاکہ آنے والے وقت میں کے پی کے کاچیف منسٹرپیپلزپارٹی کاہوگاانہوں نے نوجوانوں سے کہاکہ پیپلزپارٹی نے ہمیشہ ملک سے بے روزگاری کے خاتمے کے لیے جہادکیاہے انہوں نے کہاکہ میں جانتاہوں میرے ملک کے نوجوان ڈگریاں ہاتھ میں اٹھائے دربدرکی ٹھوکریں کھارہے ہیں لیکن اب ایسانہیںہوگاپیپلزپارٹی پرہمیشہ یہ الزام رہے ہیں کہ انہوں نے نوجوانوں کوروزگارفراہم کیے ہمارے ایک وزیراعظم یوسف رضاگیلانی نے اس ایماءپرپانچ سال جیل کاٹ کرآئے ہیں کہ انہوں نے نوجوانوں کوروزگاردیاہے ۔

آئین سے زیادتی

چلو ایک دن آئین سے سنگین زیادتی کے ملزم کو بھی چار بار نہیں تو ایک بار سزائے ...