;; جدوجہد آزادی کشمیر سے غداری کرنے والوں کا بھی احتساب ہونا چاہئے: دفاع پاکستان کونسل

17 جولائی 2017

اسلام آباد( وقائع نگار خصوصی) مذہبی،سیاسی و کشمیری جماعتوں کے قائدین اورمتحدہ جہاد کونسل کے کمانڈروں نے دفاع پاکستان کونسل کی شہدائے کشمیر کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ مضبوط،غیر مقروض،ناقابل تسخیر پاکستان کشمیریوں کی آزادی کا ضامن ہے۔ جدوجہد آزادی کشمیر سے غداری کرنے والوں کا بھی احتساب ہونا چاہئے ۔ کشمیریوں سے ہمارا ایمان اور کلمہ کا رشتہ ہے۔ بھارت کتنے وانی مارے گا کشمیر کا بچہ بچہ برہان وانی بنے گا،حافظ محمد سعید کو چوبیس گھنٹوں کے اندر رہا کیا جائے۔انکو نظربند کرکے کشمیریوں کے زخموں پر نمک پاشی کی گئی ۔کشمیری غیور قوم ہے جس نے ہمیشہ سینے پر گولی کھائی۔دفاع پاکستان کونسل کے تحت 19جولائی کو لاہور میں شہداء کشمیر کانفرنس ہو گی۔کشمیریوں نے اقوام متحدہ کے چارٹر کے عین مطابق بندوق اٹھائی،2017 کشمیر کی آزادی کا سال ہے۔کشمیر کے حوالہ سے حکومت اپنی دوٹوک پالیسی واضح کرے،شہداء کشمیر کو خراج عقیدت پیش کرتے ہیں ۔حافظ محمد سعید کی نظربندی اور سید صلاح الدین کو دہشت گرد قرار دینے سے تحریک آزادی کمزور نہیں ہو گی،مودی سن لے اب کشمیر کی آزادی قریب ہے۔پاکستان کتنے حافظ سعید نظربند کرے گا پاکستان کا بچہ بچہ حافظ سعید بن چکا ہے ۔ان خیالات کا اظہار دفاع پاکستان کونسل کے چیئرمین مولانا سمیع الحق،جماعۃ الدعوۃ کے مرکزی رہنما پروفیسر حافظ عبدالرحمان مکی،متحدہ جہاد کونسل کے سپریم کمانڈر سید صلاح الدین،ظفر علی شاہ، پیر سید ہارون علی گیلانی،مولانا فضل الرحمان خلیل،شیخ جمیل الرحمان،خرم نواز گنڈا پور،احمد رضا قصوری،جنرل عبداللہ،محمد عثمان،محمود احمد ساگر،مولانا عبدالجلیل نقشبندی،حافظ عبدالغفارروپڑی،مولانا سیف اللہ خالد،قاری یعقوب شیخ،سید یوسف شاہ،عبداللہ حمید گل،شفیق الرحمان،مولانا بشیر احمد خاکی،سید عبدالوحید شاہ،اجمل خان بلوچ،راجہ ظفر اقبال،سید فقیرحسین بخاری و دیگر نے مرکز قبا آئی ایٹ سے متصل گرائونڈ میں دفاع پاکستان کونسل کے زیر اہتمام منعقدہ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔جماعۃ الدعوۃ اسلام آباد کی میزبانی میں ہونے والی شہداء کشمیر کانفرنس میں جڑواں شہروں سے تمام مکاتب فکر اور شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے ہزاروں افراد نے شرکت کی۔اس موقع پر کشمیریوں سے رشتہ کیا لاالہ الااللہ،کشمیر بنے گا پاکستان،سید علی گیلانی سے رشتہ کیا لاالہ الااللہ،حافظ محمد سعید کا کیا پیغام ،کشمیر بنے گا پاکستان و دیگر نعرے لگائے گئے۔شرکاء نے پاکستانی پرچم اٹھا رکھے تھے۔دفاع پاکستان کونسل کے چیئرمین مولانا سمیع الحق نے کہا کہ کشمیریوں کو آج کی کانفرنس کے ذریعے پیغام دیتے ہیں کہ پاکستانی قوم ان کے ساتھ ہیں،کشمیر ،اسلام کی حفاظت کے لئے ہماری جانیں حاضر ہیں۔دفاع پاکستان کونسل کی آخری میٹنگ میں فیصلہ ہوا تھا کہ سال2017کشمیر کے نام کیا جائے گا اور سارا سال پروگرام کئے جائیں گے،اس فیصلے کے چند دن بعد حافظ محمد سعید کو نظربند کر دیا گیا،انہوں نے کہا کہ ریمنڈڈیوس کو تو چھوڑ دیا گیا ،عدالتوںنے حافظ محمد سعید کے بارے میں فیصلہ دیا کہ انکا کوئی جرم نہیں اسکے باوجود وہ نظر بند ہیں،کشمیرکے حوالہ سے بحریک جاری رہے گی۔19جولائی کو لاہور میں کشمیر کانفرنس ہو گی۔انہوں نے کہا کہ امریکہ کے نزدیک ہر مجاہد ہشت گرد ہے اب سید صلاح الدین کو دہشت گرد قرار دیا گیا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں پچھلے ایک سال سے چور چور کا شور ہے ،پانامہ کے مقدمے چل رہے ہیں،اگرکوئی چور ثابت ہو تو وہ نااہل ہو جاتا ہے اسے وزارت عظمیٰ سے ہٹا دینا چاہئے۔انہوںنے کہا کہ کشمیر کی آزادی جہاد کے ذریعے سے ہو گی۔انہوںنے کہا کہ کشمیر ی نہتے ہیں جو پتھروں سے بھارتی مسلح فوج کا مقابلہ کر رہے ہیں،بھارتی فوج کے مظالم پر عالمی دنیا خاموش ہے،ہم کشمیریوں کے ساتھ کھڑے ہیں اور رہیں گے۔کشمیر ہمارا ہے اور پاکستان کشمیریوں کا ہے۔جماعۃ الدعوۃ شعبہ سیاسی امور کے سربراہ پروفیسر حافظ عبدالرحمان مکی نے کہا کہ امریکہ نے سید صلاح الدین کو عالمی دہشت گرد ڈکلیئر کیا۔حافظ محمد سعید لاہور میں قید ہیں۔مودی نے امریکہ سے منتیں کر کے سید صلاح الدین پر پابندی کا اعلان کروایا۔امریکہ کی طرف سے دہشت گرد قرار دینا سید صلاح الدین کے لیے اعزاز ہے ،امریکہ و بھارت نے اعتراف کر لیا کہ وہ سید صلاح الدین سے ڈرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ سیدعلی گیلانی،میر واعظ عمر فاروق و دیگر قید ہیں،حافظ محمد سعید بھی کشمیر کی وجہ سے قید ہیں۔انہوںنے کہا کہ وادی نیلم میں بھارت نے پاک فوج کی گاڑی کو ہٹ کیا جس کے نتیجے میں تین فوجی شہید ہو گئے۔بھارت بلا اشتعال فائرنگ کے نتیجے میں جنگ چاہتا ہے۔متحدہ جہاد کونسل کے سپریم کمانڈر سید صلاح الدین نے کہا کہ سامراجی طاقتوں،اسلام دشمن قوتوں کو خوش کرنے کے لئے حافظ محمدسعید کو نظربند کیا گیا ہے،ہم حکومت پاکستان سے مطالبہ کرتے ہیں کہ انہیں رہا کیا جائے ۔انہوںنے کہا کہ حافظ محمد سعید اور میں دہشت گرد نہیں،ہم عالمی برادری کو کہنا چاہتے ہیں کہ کشمیری اپنے حق کے لئے میدان میں ۔
دفاع پاکستان کونسل