غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 16 گھنٹے تک جا پہنجچا جس میں شہری بلبلا اٹھے گیس کی بندش بھی جاری

17 جولائی 2017

لاہور (نامہ نگاروں سے) جھنگ گڑھ مہاراجہ شیخوپورہ اور مظفر آباد سمیت مختلف علاقوں میں بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ ایک بار پھر سے شروع ہو گئی کئی اضلاع میں گیس کی بندش نے شہریوں کی زندگی اجیرن بنا دی۔گڑھ مہاراجہ سے نامہ نگار کے مطابق گڑھ مہاراجہ اس کے نواحی علاقوں میں شدید گرمی اور حبس کے علاوہ طویل اور غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ نے لوگوں کی چیخیں نکلوا دی ہیں۔ لوڈشیڈنگ کا دورانیہ سولہ سے آٹھارہ گھنٹے تک پہنچ چکا ہے گھرو ں اور مساجد میں پانی نایاب نمازیوں کو مشکلات کا سامنا۔ مچھروں اور مکھیوں کی بہتات سے لوگوں کی رات بھر کی نیندیں حرام ہو چکی ہیں عوام کا کوئی پرسان حال نہیں، شہریوں اسلم، جاوید، افتخار، امجد اور دیگر نے حکام بالا سے فوری لوڈشیڈنگ ختم کرنے کا مطالبہ کیا ورنہ احتجاج کیا جائے گا جس کی تمام تر ذمہ داری مقامی انتظامیہ پر عائد ہو گی۔ جھنگ سے نامہ نگار کے مطابق جھنگ فیسکو اشرف شہید فیڈر پر ترقیاتی کاموں کا جواز بنا کر مسلسل چھ گھنٹے پر محیط لوڈ شیڈنگ شدید گرمی سے شہریوں کو جینا دو بھر ہوگیاامیر جماعت اسلامی جھنگ شہر کی طرف سے اعلیٰ حکام سے فوری بلاتعطل بجلی کی فراہمی کا مطالبہ۔ فیسکو کے زیر انتظام اشرف شہید فیڈر جس کے ذریعے جھنگ شہر سمیت دیگر ملحقہ علاقوں کو بجلی فراہم کی جاتی ہے شدید گرمی میں گزشتہ بیس روز سے محکمہ کی برقی لائنوں کی تنصیب اور مرمت کا کام جاری رکھا ہوا ہے جوکہ روزانہ صبح چھ تا بارہ بجے تک جاری رہتا ہے اس ضمن میں مبینہ طور پر عملہ کی کمی کے باعث کام نہایت سست رویے کا شکار ہے جس سے شہریوں کو ناصرف پریانیاں لاحق ہے بلکہ بچے،خواتین،بزرگ گرمی سے نڈھال ہیں۔ شہریوں کی طرف سے شکایات موصول ہونے کے باوجود محکمہ نے نہ تو لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ کم کیا بلکہ نہ ہی مزید عملہ کے ذریعے جلد از جلد کام کی تکمیل کے لیے عملی اقدامات کیے ہیں۔اس پریشانی کی صورت حال کے تناظر میں امیر جماعت اسلامی جھنگ شہر عبدالستار گادھی نے چیف فیسکو واپڈا فیصل آباد اور ایس ای واپڈاجھنگ خواجہ غلام یاسین سے فوری طور پر بلاتعطل بجلی کی فراہمی کا مطالبہ کیا۔
مظفرآباد سے صباح نیوز کے مطابق دارلحکومت مظفرآباد شدید گرمی کی لپیٹ میں، اوپر سے بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ 16گھنٹے سے بڑھ گیا ٗ عوام کی چیخیں نکل گئیں، لوڈ شیڈنگ کم نہ ہوسکی۔تفصیلات کے مطابق دارلحکومت مظفرآباد ایک بار پھر گرمی کی شدید لپیٹ میں آگیا جس کے باعث عوام گرمی سے بلبلا اُٹھی، دریائے نیلم اور دریائے جہلم کے کنارے ڈھیرے ڈالنے پر مجبور، محکمہ برقیات کی جانب سے بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ 16گھنٹے تک بڑھ گیا، عوام کا کہنا ہے کہ محکمہ برقیات شدید گرمی میں لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ کم کریں تاکہ گھروں میں محصور خواتین چھوٹے بچے، بوڑھے بزرگ اور مریض سکھ کا سانس لیں محکمہ برقیات کی طرف سے شیڈول کے بغیر دن اور رات میں بجلی کی طویل ترین لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ جاری رکھ کر اپنی ہٹ دھرمی کا ثبوت دے دیا۔ عوام کا کہنا ہے بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کے باعث انسانی زندگی مفلوج ہوکر رہ گئی وہاں کاروباری نظام بھی مکمل ٹھپ ہونے کی وجہ سے گھروں میں فاقہ کشی کی نوبت آگئی حکومت ِ آزادکشمیر دارلحکومت مظفرآباد میں بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ ختم کرنے کیلئے خصوصی اقدامات کرے۔ شیخوپورہ سے نمائندہ خصوصی کے مطابق محکمہ سوئی گیس شیخوپورہ نے وزیراعظم پاکستان میاں نواز شریف کے ویژن کیخلاف ورزی کرتے ہوئے شہر میں گیس کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ تیز کردیا ہے پہلے رات نو بجے سے لیکر صبح سات بجے تک گیس کی لوڈشیڈنگ کی جاتی تھی اب دوپہر کے وقت بھی شہر کے مختلف علاقوں میں غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے جس سے لوگ صبح کا ناشتہ اور رات کا کھانا بازار سے منگوانے پر مجبور ہوچکے ہیں سروے میں پتہ چلا ہے کہ گرمی کے اس موسم میں سوئی گیس کی لوڈشیڈنگ کا سن کر لوگ حیرانی کا اظہار کررہے ہیں دوسری طرف محکمہ سوئی گیس نے صنعتی اداروں سی این جی اسٹیشن کو گیس کی فراہمی مسلسل دی جارہی ہے سروے میں یہ بھی پتہ چلا ہے کہ پنجاب بھر میں شیخوپورہ اور ننکانہ صاحب واحد ضلع ہے جہاں گیس کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کر سلسلہ شروع کیا گیا علاوہ ازیں سروے میں لوگوںنے بتایا کہ محکمہ سوئی گیس شیخوپورہ کے بعض کرپٹ افسران گھریلو صارفین کی گیس بند کرکے اپنے منظور نظر صنعتی اداروں کو بلا تعطل گیس فراہم کررہے ہیں اور لائن لاسز کو کور کرنے کیلئے غریب گھریلو صارفین پر میٹر ٹمپرنگ کا الزام لگا کر اپنی ہی بنائی گئی ایک لیبارٹری کی رپورٹ بھی حاصل کرکے لاکھوں روپے کے بل گھریلو صارفین کا ڈال رہے ہیں بل کی درستگی کیلئے دفتر آنیوالے صارفین کے ساتھ انتہائی ہتک آمیز سلوک کیا جاتا ہے دفتر میں بعض غیر سرکاری ٹائوٹ صارفین سے بل کی درستگی کے نام پر بھاری رشوت بھی طلب کرتے ہیں شہریوں نے وزیراعظم پاکستان میاں نواز شریف، وفاقی وزیر شاہد خاقان عباسی، وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف اور ایم ڈی سوئی گیس امجد لطیف سے مطالبہ کیا کہ شیخوپورہ میں گیس کی لوڈشیڈنگ گھریلو صارفین کو ناجائز بل ڈالنے والے افرا د کے خلاف فوری کارروائی کی جائے۔
وزیرآباد سے نامہ نگار کے مطابق وزیرآباد میں ساری رات بجلی بند رہی۔ اطلاع کے باوجود عملہ فنی خرابی دور نہ کر سکا۔ لوگوں نے ساری رات قرب میں جاگتے گذار دی۔ مسلسل 8 گھنٹے کی سپلائی بند رہنے سے سارا شہر اندھیرے میں ڈوبا رہا، شدید گرمی حبس سے بچے اور بوڑھے نڈھال رہے جن میں اکژ بیمار پڑ گئے، عملہ طفل تسلیاں دیتا رہا، بجلی نہ ہونے سے رات بھر مچھر کاٹنے سے متعدد افراد جن میں بچے بھی شامل ہیں کو بخار ہو گیا، متعدد پیاسے بار بار پانی پی کر ڈائریا اور موشن میں مبتلا ہو گئے اور صبح کو عملہ نے بجلی بحال کی تو اُس کے فوری بعد ٹرپنگ کا سلسلہ کئی گھنٹے تک جاری رہا جس سے صارفین کا لاکھوں روپے کا سامان الیکڑانکس جل کر کر ناکارہ ہوگیا۔
لوڈشیڈنگ