بارش: سرگودھا میں چھت گرنے سے میاں‘ بیوی جاں بحق: خضدار‘ 5 افراد نالوں میں بہہ گئے

17 جولائی 2017

لاہور+ سرگودھا+ کوئٹہ (سپورٹس رپورٹر+ بیورو رپورٹ+ نامہ نگار) ملک بھر میں بارشوں کا سلسلہ جاری ہے۔ سرگودھا میں بوسیدہ مکان کی چھت گرنے سے میاں‘ بیوی جاں بحق ہو گئے ہیں۔ خضدار میں 5 افراد نالوں میں بہہ گئے ہیں۔ لاہور سے سپورٹس رپورٹ کے مطابق مون سون بارشوں کا سلسلہ ملک بھر میں جاری ہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق 24 سے 48 گھنٹوں کے دوران بلوچستان (ژوب، سبی، نصیرآباد، قلات، مکران ڈویژن) میں اکثر مقامات پر تیز ہوائوں اور گرج چمک کیساتھ بارش جبکہ اس دوران چند مقامات پر موسلادھار بارش کا بھی امکان ہے۔ شدید بارش کے باعث دریائوں اور ندی نالوں میں طغیانی کا خدشہ بھی ہے۔ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران زیریں سندھ اور بلوچستان میں کہیں کہیں جبکہ گوجرانوالہ، مالاکنڈ، پشاور ڈویژن اور اسلام آباد میں چند مقامات پر تیز ہواوں اور گرج چمک کیساتھ بارش ہوئی۔ سب سے زیادہ بارش پنجاب: سیالکوٹ(کینٹ 23، ائرپورٹ02)، اسلام آباد(سیدپور 06)، سندھ : ٹھٹھہ19، کراچی (گلشنِ حدید15، لانڈھی13، ائرپورٹ09، فیصل08، نارتھ کراچی، مسرور06، ناظم آباد05، صدر 03)، شیہد بینظر آباد12، نگرپارکر، مٹھی03، ڈپلو، چھاچھرو02، بلوچستان :خضدار18، ڑوب،سبی 17، لسبیلا 07،بارکھان 01، خیبرپختونخوا: دیر07، چراٹ میں 05 ملی میٹر ریکارڈ کی گئی۔ سرگودھا سے نامہ نگار کے مطابق سرگودھا کے نواحی علاقے بھاگٹانوالہ کے چک مانگنی پل کا فتح محمد اپنی اہلیہ کلثوم بی بی اور بیٹی‘ بیٹے کے ہمراہ گھر میں سویا ہوا تھا کہ بوسیدہ چھت اچانک گر گئی جس سے فتح محمد اور کلثوم موقع پر جاں بحق ہو گئے‘ لوگوں نے اپنی مدد آپ کے تحت جاں بحق میاں بیوی اور زخمی بچوں کو ملبے سے نکالا‘ زخمی بچوں کو بھاگٹانوالہ کے نواحی ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ کوئٹہ سے بیورو رپورٹ کے مطابق ضلع خضدار کے مختلف علاقوں میں بارشوں کے باعث 5 افراد جاں بحق ہو گئے۔ خضدار کے تحصیل وڈھ اور اورناچ کے درمیان گاسلیٹی چڑھائی پر کوئٹہ کراچی ایم 25کا پل ٹوٹ جانے کے باعث ایک گاڑی اپنی سواریوں کے ہمراہ ریلے میں بہہ گئی ، جس کی اطلاع پاتے ہی وزیراعلیٰ بلوچستان نواب ثناء اللہ خان زہری نے فوری احکامات جاری کر دئیے اور ریسکیو آپریشن شروع کیاگیا رات گئے ایک 9سالہ بچے کی نعش قریبی ندی سے برآمد کرلی گئی جو پانی میں بہہ گیا تھا ،اتوار کی اعلیٰ الصبح لیویز فورس نے اورناچ کے قریب سے دوسری تیسری نعش بھی برآمد کرلی۔ کراچی شاہراہ کو لنک کرتے ہوئے رابطہ سڑک کو بحال کردیا گیا۔ دوسری جانب خضدار کے علاقہ فیروز آباد کے رہائشی دو بھائی لکڑی جمع کرنے پہاڑوں کی جانب نکل گئے تھے اور پانی کا ریلا آنے کی وجہ سے وہ دونوں خیسن جھل میںبہہ کر جاں بحق ہوگئے یکے بعد دیگردونوں بھائیوں محمد عثمان اور بلال احمد مردوئی کی نعش نکال کر ورثاء کے حوالے کردیا۔