بلوچستان میں شدید بارش‘ پل پانی میں بہہ گئے‘5 افراد ہلاک

17 جولائی 2017

خضدار(این این آئی)بلوچستان میں شدید بارشوں کے باعث ندی نالوں میں طغیانی آ گئی جس کے باعث بخالو کے مقام پر پل پانی میں بہہ گیا اور کراچی اور کوئٹہ کے درمیان زمینی رابطہ منقطع ہو گیا اطلاعات کے مطابق شدید بارشوں کے باعث ندی نالوں میں طغیانی آ گئی اور حب اور خضدار کے درمیان بخالو کے مقام پر پل پانی میں بہہ گیا ¾ پل ٹوٹنے کے باعث دونوں اطراف گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں اور کوئٹہ سے کراچی کا زمینی رابطہ منقطع ہو کر رہ گیا۔وزیراعلیٰ بلوچستان نواب ثناءاللہ زہری نے پل ٹوٹنے کا نوٹس لیتے ہوئے ضلعی انتظامیہ کو فوری طور پر متبادل راستہ تیار کرنے کی ہدایت کی ہے جب کہ ڈپٹی کمشنر خضدار سہیل الرحمان بلوچ نے متبادل راستے کے لئے ہیوی مشینری کو موقع پر بھیج دیا ہے اور لیویز نے خصدار اور وڈھ کے مقام پر ٹریفک کو روک لیا ہے اس کے علاوہ موسیٰ خیل، قلات، زیارت اور ژوب میں بھی شدید بارشوں کے باعث کئی ایکٹر پر کھڑی فصلیں تباہ ہوگئیں اور مکانات کو بھی شدید نقصان پہنچا۔کوئٹہ قومی شاہراہ کا پل ٹوٹ جانے کے باعث 3افراد گاڑی سمیت پانی میں بہہ گئے ¾تینوں افراد کی لاشیں وڈھ اوراور ناچ کے علاقے سے برآمد کرلی گئیں۔دوسری جانب فیروزآباد کے علاقے میں 2سگے بھائی بارش کے ریلے میں بہہ گئے ¾جن کی لاشیں نکال لی گئیں، حادثات کے بعد پل کے ٹریفک بحال کردیا گیا
بلوچستان بارش