ڈولی لفٹ ٹوٹنے سے سوات میں 5 افراد جاں بحق

17 جولائی 2017
ڈولی لفٹ ٹوٹنے سے سوات میں 5 افراد جاں بحق

سوات کی وادی کالام میں ایک اور ڈولی لفٹ ٹوٹ کر گر گئی، 5 افراد جاں بحق، دو کو بچا لیا گیا، مرنے والوں میں 3 افراد کا تعلق ایک ہی خاندان سے ہے
یہ افسوسناک حادثہ وادی کالام کے علاقہ پالیر کے مقام پر پیش آیا جہاں عین دریا کے بیچ میں پہنچنے پر ڈولی لفٹ کی رسی ٹوٹ گئی جس میں سات افراد سوار تھے۔ اس مقام پر دریا پر بنایا گیا پل 7 سال قبل سیلاب میں بہہ گیا تھا۔ مقامی لوگوں کی بار بار استدعا کے باوجود مقامی انتظامیہ اور صوبائی حکومت نے اس کی تعمیر میں دلچسپی نہیں لی اور یہ پل نہیں بن سکا۔ جس کے بعد یہاں بھی غیر قانونی طور پر مقامی لوگوں نے دریا پار کرنے کے لئے یہ ڈولی لفٹ بنائی تھی۔ حکومت کی طرف سے انسانی جانوں کے تحفظ کے لئے اس قسم کی غیر معیاری لفٹوں کے استعمال پر پابندی عائد کی جا چکی ہے۔ مگر اس کے باوجود ان کا استعمال جاری ہے۔ آزاد کشمیر اور خیبر پی کے میں ان کا استعمال عام ہے۔ ان ڈولی لفٹوں میں کوئی حفاظتی انتظام نہیں اکثر پیسوں کے لالچ میں مطلوبہ گنجائش سے زیادہ سواریاں بٹھائی جاتی ہیں۔ جس کی وجہ سے ایسے حادثات رونما ہوتے ہیں۔ حکومت کا فرض ہے کہ وہ ایسے عناصر کیخلاف سخت کارروائی کرے جو اس قسم کے خطرناک کاروبار میں ملوث ہیں اور انسانی جانوں سے کھیل رہے ہیں اور شہریوں کی آمدروفت کیلئے دریاﺅں اور پہاڑی مقامات پر پلوں کی تعمیر کو ترجیح دیں۔