’’چیف جسٹس اور آرمی چیف بہاریوں کے شناختی کارڈ کا مسئلہ حل کرائیں‘‘

17 جولائی 2017

کراچی( اسٹا ف رپورٹر) محبان پاکستان تحریک کے زیر اہتمام مقامی ہال میں عید ملن ظہرانے کا اہتمام کیا گیا جس میں چیئرمین ممتاز حسین انصاری، ڈاکٹر شکیل احمد ‘قیصر جمیل ملک ایڈوکیٹ، جمال الحق صدیقی ، ماسٹر امین اللہ، امتیاز منیری، حیدر علی حیدر کے علاوہ مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے عمائدین نے بڑی تعدادمیں شرکت کی۔ اس موقع پربہاریوں کے شناختی کارڈ میں نادرا کی جانب سے ڈالی جانے اولی رکاوٹوں پر خطاب کرتے ہوئے ممتاز انصاری نے کہا کہ کراچی میں مقیم بہاریوں کے شناختی میں رکاوٹیں ڈال کر ان کی حب الوطنی اور پاکستان پرستی کی توہین کی جارہی ہے۔ بہاری ہر قسم کی شکوک و شہبات سے بالاتر پاکستانی ہیں انہیں مورخین کاروان آزادی کا قافلہ سالار لکھتے ہیں۔ افواج پاکستان کے افسران و جوان انہیں بقائے پاکستان کی جنگ کا ہر اول دستہ کہتے ہیں۔ 1965 کی جنگ کا ہیرو اسکوارڈرن لیڈر ایم ایم عالم بہاری برادری کا سپورٹ تھا بہاری اور پاکستان لازم و ملزوم ہیں۔ ان سے پاکستانیت کا ثبوت مانگ کر حب الوطنی کی توہین نہ کی جائے۔ مشرقی پاکستان میں بہاریوں نے پاک فوج کے ساتھ دفاع وطن کی جنگ میں اپنا سب کچھ قربان کردیا۔ چیف جسٹس آف پاکستان او ر آرمی چیف بہاریوں کے ساتھ تارکین وطن جیسا سلوک روا رکھنے کا نوٹس لیں اور قومی شاختی کارڈ کا مسئلہ حل کرائیں۔ ظہرانے سے دیگر عمائدین نے بھی خطاب کیا اور حکومت کے غیر دانشمندانہ او ر متعصبانہ روئیے پرشدید غم و غصے کا اظہار کرتے ہوئے اس بات پر اتفاق کیا کہ مسائل کے حل کے لئے وسیع تر اتفاق رائے کے ذریعے آئندہ کا لائحہ عمل طے کیا جائے گا۔