ماہی گیروں کی فلاح و بہبود کے اقدامات اٹھائے جارہے ہیں ۔ گورنر سندھ

17 جولائی 2017

کراچی (اسٹاف رپورٹر )گورنر سندھ محمد زبیر نے کہا ہے کہ سمندری خوراک کے کاروبار سے وابستہ افراد با الخصوص ماہی گیروں کی فلاح و بہبود اس شعبہ کی فعالیت کے انتہائی ناگزیر ہے اس ضمن میں حکومت ماہی گیروں کے لئے صحت ، تعلیم اور دیگربنیادی ضروریات کے لئے ترجیحی اقدامات یقینی بنارہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ماہی گیروںکو جدید آلات کی فراہمی کے ساتھ ساتھ ان کی بستیوں میں انفرااسٹرکچر کی بحالی و ترقی کے لئے بھی بھرپور اقدامات اٹھار ہی ہے، فشریز کی صنعت سے پاکستان کو سالانہ بھاری زرمبادلہ حاصل ہوتا ہے جو کہ ملکی ترقی و خوشحالی کے لئے بہت ضروری ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گورنر ہائوس میں پاک ماہی ویلفیئر ایسوسی ایشن کے پانچ رکنی وفد جس کی سربراہی راشد سردار کررہے تھے ، سے ملاقات میں کیا ۔ملاقات میں ماہی گیروں کے مسائل ، بنیادی ضروریات کی فراہمی میں حائل رکاوٹوں ، ماہی گیروں کی فلاح و بہبود اور دیگر امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا ۔ گورنر سندھ نے کہا کہ ماہی گیروں کی اہمیت کو مدنظر رکھتے ہوئے حکومت نے ماہی گیروں کو جدید آلات کی فراہمی اور انھیں جدید تقاضوں کے مطابق تربیت دینے کے لئے بھرپور اقدامات اٹھا ئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بنگالی کمیونٹی کی اکثریت ماہی گیری کے شعبہ سے وابستہ ہے ان کے جائز مسائل کے حل کے لئے متعلقہ اداروں سے بات کی جائے گی ، اس شعبہ میں بنگالی کمیونٹی کی خدمات قابل تحسین ہیں ۔