سوال یہ ہے

17 جولائی 2017
سوال یہ ہے

مکرمی! دنیا میں بعض اوقات بڑے عجیب و غریب واقعات منظر عام پر آتے ہیں مثلاً اب آپ دیکھ لیں کہ پانامہ کے بعض محققین نے دنیا بھر کے بعض سیاستدانوں‘ وزرائے اعظم اور دیگر لوگوں کے نام جائیداد اور دولت کی تحقیق کر کے ان کو منظر عام پر لایا خاص طورپر جن کی جائیداد بیرون ملک تھیں جنہیں آف شور کہا جاتا ہے۔ پاکستان میں بھی ہلہ گلہ مچ گیا ہے۔ یہاں ایک اہم سوال یہ ہے کہ پانامہ میں یہ کون لوگ ہیں‘ یہ سائنسدان ہیں یا ماہر اقتصادیات ہیں یا اخباری صحافی؟ یہ کون اور کیوں ایسا کر رہے ہیں۔ سوال یہ ہے کہ ان کو ایسی ریسرچ سے کیا ملتا ہے؟ حالانکہ ایک چھوٹے سے ملک کے جس کا رقبہ صرف 29,209 مربع میل ہے اس کی آبادی 25 لاکھ ہے اس میں مشہور ”پانامہ نہر“ ہے آج تک کسی اخبار یا رسالے میں ان محققین کے بارے میں نہیں آیا ہے کہ یہ کون لوگ ریسرچ کرتے ہیں اور ان کو اس سے کیا فائدہ ملتا ہے؟(میاں محمد اکرم‘ بی اے‘ ایل ایل بی‘ مکان نمبر R-227 اٹک شہر 0321-5713840)

سوال؟

سابق سیکرٹری خارجہ ریاض محمد خان کا نام سفارتی حلقوں میں احترام کے ساتھ لیا ...