سانگلہ کے نواحی گاؤں میں پولیس نے 12 سالہ بچی کی شادی 60 سالہ شخص کیساتھ ناکام بنا دی

17 جولائی 2016

سانگلہ ہل (نمائندہ نوائے وقت) نواحی چک نمبر 111 چرونڈ میں 12 سالہ نابالغ بچی عاصمہ بی بی کے والدین نے پیسوں کی خاطر 60 سالہ بوڑھے یعقوب مسیح سے شادی طے کر دی، تھانہ صدر کی پولیس موقع پر پہنچ گئی۔ پولیس کو دیکھتے ہی نکاح خواں پادری بابو منیر مسیح، باراتی مشتاق مسیح اور بچی کا والد پرویز مسیح فرار ہوگئے۔ پولیس نے بوڑھے دولہا یعقوب مسیح، اسکے بھائی گلزار مسیح اور بچی عاصمہ کی سوتیلی ماں شہناز بی بی کو گرفتار کر لیا، تھانہ صدر کی پولیس نے اپنی مدعیت میں چائلڈ میرج ایکشن ایکٹ کے تحت بچی عاصمہ بی بی کے والد پرویز مسیح، سوتیلی والدہ شہناز بی بی، بوڑھے دولہا یعقوب مسیح، بھائی گلزار مسیح، نکاح خواں پادری بابو منیر مسیح، باراتی طارق مسیح اور مشتاق مسیح کیخلاف مقدمہ درج کرلیا۔ چک نمبر 111 چرونڈ کے رہائشی پرویز مسیح اور اسکی دوسری بیوی شہناز بی بی نے پیسوں کی خاطر اپنی 12 سالہ نابالغ بچی عاصمہ بی بی کا رشتہ چک نمبر 28 لونگووال کے رہائشی عمر رسیدہ شخص یعقوب مسیح سے طے کردیا۔ گذشتہ روز نکاح کی تقریب چرونڈ میں شروع ہوئی تو کسی نے بے جوڑ شادی کی اطلاع تھانہ صدر پولیس کو کردی جس پر سب انسپکٹر محمد لطیف بھاری نفری کے ہمراہ موقع پر پہنچ گئے۔ نکاح خواں پادری بابو منیر مسیح نکاح کروا رہا تھا، پولیس کو دیکھتے ہی نکاح کی تقریب ختم ہو گئی، 3 افراد موقع سے فرار ہوگئے جبکہ 4 افراد کو گرفتار کرلیا گیا۔