ریلوے کیلئے لوہا خریداری میں غبن‘ بلور اور دیگر کو نوٹس‘ چیئرمین نیب کی طلبی‘ حکام خدا کا خوف کریں: سپریم کورٹ

17 فروری 2015
ریلوے کیلئے لوہا خریداری میں غبن‘ بلور اور دیگر کو نوٹس‘ چیئرمین نیب کی طلبی‘ حکام خدا کا خوف کریں: سپریم کورٹ

اسلام آباد (صباح نیوز) سپریم کورٹ نے ریلوے کیلئے لوہے کی خریداری میں مبینہ 45 کروڑ روپے کے غبن کے معاملہ میں سابق وزیر ریلوے غلام احمد بلور اور دیگر فریقین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے چیئرمین نیب کو طلب کرلیا جبکہ عدالت نے نیب کے تحقیقاتی افسر سے  مقدمہ میں شامل ملزموں کیخلاف ریفرنس دائر نہ کرنے اور تحقیقات مکمل نہ کرنے پر دو روز میں وضاحت طلب کر لی ہے۔ نیب کی جانب سے گرفتار دو بھائیوں ذیشان اور جواد کی درخواست ضمانت کی سماعت کی تو وکیل نے بتایا کہ ان کے موکلان کو نیب نے 2013ء میں گرفتار کیا جبکہ اس کیس میں سابق وزیر غلام احمد بلور، سی ایم ای ریلوے لوکوموٹوز چودھری طارق بہزاد، سلیم گنڈا پور سمیت دیگر دس افراد شامل ہیں لیکن صرف دو بھائیوں کو گرفتار کیا گیا ہے اور اتنے عرصہ میں ان کیخلاف کوئی ریفرنس بھی دائر نہیں کیا گیا۔ تفتیش مکمل نہ کرنے اظہار برہمی کرتے جسٹس ثاقب نثار نے کہاکہ اس کیس میں شہریوں کی آزادی کا معاملہ ہے، کیا نیب کے افسروں کی نظر میں عام شہری کی آزادی کی یہ قیمت ہے، اتنے عرصہ سے شہری گرفتار ہیں نیب حکام خدا کا خوف کریں اور شہریوں پر رحم کریں۔ عدالت کو بتایا گیا کہ نیب نے تحقیقاتی افسر کو تبدیل کردیا گیا ہے، نئے تحقیقاتی افسر نے عدالت کو بتایا کہ انہوں نے اس معاملہ میں ریفرنس تیار کرکے دس فروری کو ڈائریکٹر جنرل نیب کو بھجوا دیا ہے جو ریفرنس کی منظوری دینگے جس کے بعد مزید ایکشن لیا جائے گا۔ عدالت نے سابق تحقیقاتی افسر کو حکم دیا کہ وہ  2روز میں وضاحتی بیان عدالت میں جمع کرائیں کہ انہوں نے کیوں اتنے عرصہ میں تحقیقات مکمل نہیں کیں۔ جسٹس ثاقب  نثار کا کہنا تھا بدعنوانی میں 10افراد ملوث ہیں  لیکن نیب نے صرف ٹھیکیداروں کو گرفتار کررکھا ہے۔ نیب کے افسر تحقیقات میں تاخیر جان بوجھ کر کرتے ہیں، یہ انسانی آزادی کا سوال ہے اس کیس کو ایسے نہیں چھوڑا جاسکتا، ملزم دوسال سے نیب کی حراست میں ہیں لیکن انکوائری افسر تحقیقات دبا کر بیٹھا ہے، چیئرمین خودپیش ہوکر وضاحت کریں۔ جسٹس اعجاز افضل خان نے کہا کہ جو لوگ جرائم کرتے ہیں ان پر ہاتھ ڈالاجانا چاہئے۔ عدالت نے استفسار کیا کہ سابق وزیر ریلوے غلام احمد بلور اور دیگر کی جانب سے کون پیش ہو رہا ہے تو بتایا گیا کہ ان کے وکیل پہلے تو موجود تھے لیکن اس وقت موجود نہیں۔