سیاسی جماعتوں کے عسکری ونگ ختم کرنیکا واضح پیغام

17 فروری 2015

اسلام آباد (محمد نواز رضا۔ وقائع نگار خصوصی) وزیراعظم کے دورہ کراچی میں سیاسی جماعتوں کے ’’عسکری ونگز‘‘ ختم کرنے کا واضح پیغام دیدیا گیا ہے۔ وزیراعظم کی زیرصدارت ایپکس کمیٹی کے اجلاس میں سابق صدر زرداری کی شرکت اور نوازشریف سے زرداری کی ’’ون آن ون‘‘ ملاقات غیرمعمولی اہمیت کی حامل ہے۔ کراچی کی صورتحال کے پیش نظر صوبائی حکومت کا کردار محدود ہوتا دکھائی دے رہا ہے۔ امن و امان کے حوالے سے فوج کا کردار بڑھ رہا ہے۔ عسکری قیادت کی جانب سے سیاسی جماعتوں کو مسلح ونگز ختم کرنے کا مشورہ اس بات کا اشارہ ہے کہ کراچی میں ’’عسکریت پسندی‘‘ کو سختی سے کچل دیا جائیگا۔ وزیراعظم 18 فروری کوئٹہ جا رہے ہیں، وہاں بھی ایپکس کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کریں گے۔ ذرائع کے مطابق نوازشریف، زرداری ملاقات میں ملکی سیاسی صورتحال کے علاوہ سینٹ کے چیئرمین اور ڈپٹی چیئرمین کے انتخاب پر بھی بات چیت ہوئی۔ زرداری نے ڈپٹی چیئرمین پیپلز پارٹی سے لئے جانے پر بات کی جبکہ وہ پنجاب سے سینٹ کی ایک نشست مانگ رہے ہیں۔ ذرائع کے مطابق وزیراعظم نے مسلم لیگ (ن) سندھ کے وفد سے ملاقات میں گفتگو سانحہ شکارپور‘ بلدیہ اور امن و امان کی صورتحال پر مرکوز رکھی۔ غوث علی شاہ‘ ممتاز علی بھٹو اور لیاقت جتوئی کو منانے کی کوئی بات نہیں ہوئی۔