جولائی تا دسمبر 2014ء کے دوران 651 بلین روپے کا بجٹ خسارہ ہوا

17 فروری 2015

اسلام آباد (نمائندہ خصوصی) جولائی تا دسمبر 2014 کے دوران 651 بلین روپے کا بجٹ خسارہ ہوا ہے۔ جس کو پورا کرنے کے لئے 510 بلین روپے اندرونی ذرائع اور 141 بلین روپے بیرونی ذرائع سے حاصل کئے گئے۔ وزات خزانہ کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق مالی سال 2014-15 کے پہلے 6 ماہ میں نجکاری کے سودوں سے 15,2 بلین روپے حاصل ہوئے۔ اس عرصہ میں 2319 بلین روپے کے مجموعی اخراجات ہوئے جبکہ کرنٹ اخراجات 1988 بلین روپے رہے۔ وفاقی حکومت نے 524 بلین روپے اندرنی قرضوں کے سود اور 48.2 بلین روپے بیرونی قرضوں کی سود کی ادائیگی پر خرچ کئے۔ اس عرصہ میں دفاعی اخراجات 329 بلین روپے رہے۔ ترقیاتی مقاصد کے لئے 321 بلین روپے خرچ کئے گئے ۔ اس میں سے وفاق نے 125 بلین روپے اور صوبوں نے 143 بلین روپے خرچ کئے۔ 6 ماہ میں 1266 بلین روپے مجموعی ریونیو حاصل کیا گیا۔ ایف بی آر کے ذریعے 1171 بلین روپے اور مؤثر ذرائع سے 94 بلین روپے حاصل ہوئے۔ گیس انفراسٹرکچر سیس کی مد میں 15.5 بلین روپے اور گیس سرچارج کی مد میں 14 بلین روپے حاصل ہوئے۔ پٹرولیم لیوی کی صورت میں 59 بلین روپے وصول کئے گئے۔ 723 بلین روپے صوبوں کو منتقل کئے گئے۔