دہشت گردی سے نمٹنے کیلئے ایشیائی، افریقی ممالک کو مشترکہ حکمت عملی بنانا ہوگی: صدر ممنون

17 فروری 2015

اسلام آباد ( صباح نیوز) صدر مملکت ممنون حسین نے کہا ہے کہ دہشت گردی سے نمٹنے کیلئے ایشیائی اور افریقی ملکوں کو مشترکہ حکمت عملی اپنانا ہوگی۔ اس سلسلے میں پاکستان ہر قسم کے تعاون کیلئے تیار ہے۔ یہ بات صدر مملکت ممنون حسین نے افریقی ممالک کے سفیروں سے بات چیت کے دوران کہی جنھوں نے کراچی کونسل آف فارن ریلیشن کے جنرل سیکرٹری احمد مختار زبیری کے ہمراہ ایوان صدر اسلام آباد میں ان سے ملاقات کی۔ صدر مملکت نے لیبیا میں دہشت گرد حملے میں بے گناہ افراد کی موت پر افسوس کا اظہار کیا۔ اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان افریقہ کے ساتھ اپنے تعلقات کو بہت اہمیت دیتا ہے اور انہیں مزید مضبوط کرنے کا خواہاں ہے۔ افریقی ممالک کے ساتھ اقتصادی تعاون کا فروغ وقت کی اہم ضرورت ہے۔ اس مقصد کیلئے بزنس وفود کے تبادلے بہت اہم ہیں۔ مختلف تجارتی نمائشوں اور تجارتی وفد کے تبادلوں کے ذریعے بھی اقتصادی اور تجارتی تعلقات کو فروغ دیا جاسکتا ہے۔ دریں اثنا ترک سفیر صادق بابر نے ایوان صدر میں ان سے ملاقات کی۔ ملاقات کے دوران صادق بابر نے ترک صدر کی جانب سے اپنے پاکستانی ہم منصب کیلئے کینا ککالی لینڈ بٹلز کی ایک سوویں یادگاری تقریب میں شرکت کیلئے دعوت نامہ میں توسیع کا پیغام دیا جو کہ 24 اپریل کو منعقد ہو رہی ہے۔ اس موقع پر انہوں نے ترک سفیر سے کہا کہ وہ ترک کمپنیوں کی جانب سے پاکستان میں تمام شعبوں خصوصاً توانائی‘ انفراسٹرکچر‘ شہری ترقی اور کم قیمت ہائوسنگ میں سرمایہ کاری کے فروغ کیلئے کردار ادا کریں۔ دونوں ممالک کے درمیان ثقافتی تعاون اور عوامی روابط کا فروغ بھی انتہائی اہم ہے۔