پنجاب، خیبر پی کے، قبائلی علاقوں میں 3 روزہ انسداد پولیو مہم کا آغاز

17 فروری 2015

لاہور + پشاور (نوائے وقت نیوز+ آن لائن) پنجاب اور قبائلی علاقوں میں تین روزہ انسداد پولیو مہم کاآغاز ہوگیا۔ ایک کروڑ 80 لاکھ بچوں کو معذوری سے بچاؤ کے قطرے پلائے جائیں گے۔ چارسدہ میں پولیو مہم کے دوران دفعہ 144 نافذ کردی گئی ہے۔پنجاب میں تین روزہ پولیو مہم کا آغاز ہوگیا۔ مہم میں 40 ہزار ٹیمیں حصہ لے رہی ہیں۔ ٹیمیں گھر گھر جا کر بچوں کو پولیو کے قطرے پلائیں گی۔ محکمہ صحت پنجاب کے مطابق صوبے کے داخلی وخارجی راستوں، بس اڈوں، ریلوے سٹیشنز، موٹر وے اور ائرپورٹس پربھی سفر کرنے بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے کیلئے ٹیمیں مقرر کی گئی ہیں۔ صوبے کے تمام سرکاری ہسپتال اور ہیلتھ سنٹرز پر بھی پولیو کے قطرے پلانے کے انتظامات کئے گئے ہیں۔ 5 سال تک کی عمر کے ایک کروڑ 80 لاکھ سے زائد سرگودھا میں بھی 6 لاکھ 62 ہزار 154 بچوں، ملتان میں 7 لاکھ سے زائد بچوں کو حفاظتی قطرے پلائے جائیں گے۔ فیصل آباد میں بھی پولیو مہم کا آغاز ہوگیا ہے۔ ملک کے قبائلی علاقوں میں تین روزہ انسداد پولیو مہم کا آغاز ہوگیا۔ مہم کے دوران 6 لاکھ 95 ہزار بچوں کو حفاظتی قطرے پلانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے۔ فاٹا میں انسداد پولیو مہم کے انچارج ڈاکٹر اختیار کے مطابق فاٹا میں سخت سکیورٹی انتظامات کے تحت تین روزہ انسداد پولیو مہم کا آغاز کردیا گیا ہے۔ خیبر پی کے اور فاٹا میں ’’صحت کا اتحاد‘‘ مہم کے تحت 35 لاکھ بچوں کو پولیو اور دیگر امراض سے بچائو کے قطرے پلائے جائیں گے۔ صحت کا اتحاد مہم کے تحت شمالی وجنوبی وزیرستان، ایف آر پشاور، ایف آر بنوں سمیت نوشہرہ، مردان، چارسدہ، صوابی، کرک، کوہاٹ، ہنگو، ڈی آئی خان، بنوں اور لکی مروت میں پیرسے شروع ہوگئی ہے۔ پشاور میں دو روزہ مہم کے دوران ضلعی انتظامیہ نے ڈبل سواری پر پابندی عائد کردی ہے۔ دریں اثناء خیبر ایجنسی کی تحصیل باڑا اور جمرود کے نوگو ایریاز میں کئی سال بعد انسداد پولیو مہم شروع ہوئی۔