رات 10 بجے کے بعد شادی ہالز کی بندش ہائیکورٹ نے وکلا کو حتمی بحث کیلئے طلب کرلیا

17 فروری 2015

لاہور (وقائع نگار خصوصی) ہائیکورٹ نے رات 10 بجے شادی ہالز کی زبردستی بندش کے خلاف دائر درخواست پر فریقین کے وکلاء کو حتمی بحث کیلئے طلب کرلیا۔ جسٹس شجاعت علی خان نے کیس کی سماعت کی۔ درخواست گزار نے عدالت کو آگاہ کیا کہ ضلعی انتظامیہ نے رات 10 بجے کے بعد شادی کی تقریبات پر پابندی عائد کر رکھی ہے۔ انتظامیہ نوٹیفکیشن کا سہارا لیکر شادی ہالز کو 10 بجتے ہی زبردستی بند کرا دیتی ہے۔ شادی تقریبات کے اوقات کو وقت کی بندش سے استثنیٰ فراہم کرنے کا حکم دیا جائے۔ سرکاری وکیل نے عدالت کو آگاہ کیا کہ حکومت پنجاب کے احکامات کی روشنی میں رات 10 بجے کے بعد شادی ہالز میں شادی کی تقریبات پر پابندی عائد کی گئی ہے۔ عدالت نے سماعت 2 اپریل تک ملتوی کردی۔