اوپن یونیورسٹی ، ادبی و ثقافتی میلے کے تیسرے روز 2 کتابوں کی تقریب رونمائی

17 اپریل 2018

اسلام آباد (نا مہ نگار)علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی میں منعقدہ ادبی و ثقافتی میلے کے تیسری روز 2 مشہورکتابوں کی تقریب رونمائی ہوئی ٗ ان کتابوں میں اختر عثمان کی غزلوں اور شعری مجموعے پر مشتمل کتاب "چراغ زار" جبکہ فاروق عادل کی سیاسی شخصیات کے 35شخصی خاکوں پر مشتمل کتاب "جو صورت نظر آئی"شامل تھی۔چراغ زار کی تقریب رونمائی کی صدارت افتخار عارف نے کی تھی۔دیگر مقررین میں منظر نقوی اور قاسم یعقوب شامل تھے جبکہ "جو صورت نظر آئی" کی تقریب رونمائی کی صدارت خورشید ندیم نے کی تھی ٗ دیگر مقررین میں محمد حمید شاہد اور جنید آذر شامل تھے۔مقررین نے شاعری اور غزلوں کو ایک منفرد انداز میں پیش کرنے کی اختر عثمان کی کوششوں کو سراہا جس نے آرٹ فریمیوں کی ایک بڑی تعداد کو اپنی طرف متوجہ کیا۔ انہوں نے کہا کہا کہ فاروق عادل کی کتاب نظروں کو اپنی جانب مبذول کرنی والی ہے جس میں انہوں نے قائد اعظم محمد علی جناح اور شہید بے نظیر بھٹو جیسے عظیم لیڈروں اور سیاسی شخصیات کے خاکے پیش کئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اس کتاب نے اہم شخصیات کی نئی معلومات فراہم کی ہے۔وائس چانسلر ٗ پروفیسر ڈاکٹر شاہد صدیقی نے اپنی اختتامی خطاب میں دونوں مصنفین کی ادبی خدمات کو شاندار الفاظ میں سراہا۔ "ادب اور سوشل میڈیا"پر خصوصی سیشن بھی منعقد کی گئی جس کی صدارت افتخار عارف نے کی جبکہ دیگر مقررین میں وجاہت مسعود ٗ زاہدہ حنا ٗ منظر نقوی ٗ فاطمہ حسن اور خورشید ندیم شامل تھے۔زاہدہ حنا کے ساتھ ملاقات کے معاونین فاطمہ حسن اور حمیرا اشفاق نے زاہدہ حنا کی تعارف میں اُن کی ادبی سفر کی کہانی اور کامیابیوں کا تفصیلی ذکر کیا۔میلے میں پاکستان کے مختلف صوبوں کے ثقافتی پروگرام پیش کئے گئے ڈول کی تھاپ پر خٹک ڈانس ٗ طلبہ کے بنگھڑے اور قبائلی اتھن توجہ کا مرکز رہے۔