برسات شروع ہونے سے قبل خطرناک عمارتیں مسمار کرانے کا حکم

17 اپریل 2018

فیروزوالہ (نامہ نگار) حکومت پنجاب ڈیزاسٹرمینجمنٹ اتھارٹی کے ذریعے صوبہ بھرکی ضلعی انتظامیہ کوہدایت جاری کی ہے کہ موسم برسات شروع ہونے سے قبل خطرناک قراردی جانے والی عمارتوں کومسمار کرنے کا کام مکمل کیاجائے کیونکہ پچھلے سال مون سون کے دوران زیادہ ترایسی عمارتیں ہی گرکرانسانی جانوں کے ضیاع کاباعث بنی تھیں جنہیںمسمار کرنے کی خاطر خطرناک قراردیاگیاتھا مگرانہیں بروقت مسمار کیاگیا اورنہ ہی ان کی مرمت کی گئی تھی ذرائع نے بتایاہے کہ ضلع وار سروے کے بعدپنجاب میں مجموعی طورپر9159عمارتوں کوخطرناک قراردیاگیاتھا جن میں سے 3496عمارتوں کومسمار جبکہ 5261عمارتوں کومرمت کرنے کے احکامات جاری کیے گئے تھے جن میں سے مجموعی طورپر 1082عمارتوں کومسمار کیاجاچکاہے جبکہ 2667عمارتوں کومرمت کرکے رہنے کے قابل بنایاگیاہے اس دوران ان عمارتوں کے مالکان کے خلاف مجموعی طورپر پنجاب بھر میں 310مقدمات پنجاب لوکل گورنمنٹ آرڈی ننس کے تحت درج کیے گئے تھے۔