پنجاب، خیبر پی کے، اسلام آباد میں بارش، چھتیں گرنے سے ماں بیٹی جاں بحق، 5 زخمی

17 اپریل 2018

اسلام آباد، لاہور (نمائندہ خصوصی+ ایجنسیاں+ نامہ نگاران) اسلام آباد میں موسلادھار بارش سے مکان کی چھت گرنے سے ماں بیٹی جاں بحق جبکہ 2 افراد شدید زخمی ہو گئے۔ پولیس کے مطابق جاں بحق افراد میں 20 سالہ خاتون اور اسکی 3 سالہ بیٹی فاطمہ شامل ہیں۔ کمال پور انٹرچینج سرگودھا روڈ کے قریب وسیم ٹائون میں مکان کی چھت گرنے کے نتیجے میں 80 سالہ جبار خان، 7 سالہ بابو بی بی اور 3 ماہ کا نومولود مومن خان شدید زخمی ہو گئے ۔ گزشتہ روز اسلام آباد سمیت پنجاب کے مختلف شہروں لاہور، جہلم، ملتان، گوجرانوالہ، ڈیرہ غازیخان، راجن پور اور جہلم میں بارش نے ہر شے کو دھو کر نکھار دیا۔ لاہور اور اس کے ملحقہ علاقوں میں بوندا باندی کا سلسلہ جاری رہا۔ خیبر پی کے کے مختلف علاقوں میں بھی کہیں ہلکی اور کہیں تیز بارش ہوئی، مانسہرہ، بٹگرام، تور غر اور کوہستان میں بارش کا نیا سلسلہ شروع ہوگیا۔ وادی نیلم کے ہیڈکوارٹر اٹھ مقام سمیت شاردہ، کیل اور بالائی وادی نیلم و گریز میں بھی بارش ہوئی جبکہ پہاڑوں پر برف باری بھی ہوئی۔ مظفرآباد، زیریں وادی نیلم، ہٹیاں، وادی لیپہ، ضلع باغ اور پونچھ کے ملحقہ علاقوں میں بھی کہیں ہلکی اور کہیں تیز بارش ہوئی۔ آزاد کشمیر میں بارش کے باعث مختلف مقامات پر لینڈ سلائیڈنگ ہوئی، ندی نالوں میں طغیانی، دریائے نیلم اور جہلم کے پانی میں اضافہ، دارالحکومت کی مین شاہراہ بھی تالاب کا منظر پیش کرنے لگی۔ دوسری طرف لاہور میں موسم میں بہتری آنے سے لیسکو لاہور کا شارٹ فال 200 میگا واٹ کم ہوگیا۔ گزشتہ روز لیسکو کو 375 میگا واٹ کے شارٹ فال کا سامنا تھا۔ سیالکوٹ میں گرمی کی شدت بڑھنے کے ساتھ بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ نے شہریوں کا جینا محال کردیا۔ ایک طرف غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ جاری رہی جبکہ دوسری طرف مرمت کے نام پر اکثر علاقوں میں پانچ پانچ گھنٹے کی طویل لوڈ شیڈنگ کی جارہی ہے۔ دوسری طرف فیروزوالا میں شہریوں کے خلاف بجلی چوری کا جھوٹا مقدمہ درج کروانے پر شہری سراپا احتجاج بن گئے۔ شہریوں نے موٹر وے انٹرچینج فض پور کے قریب سڑک پر ٹائروں کو آگ لگا کر شدید احتجاج کیا۔ لیسکو کے خلاف نعرے بازی اور افسران کی معطلی کا مطالبہ کیا۔ بتایا گیا ہے کہ سب ڈویژن لیسکو برج اٹاری نے قصبہ ٹھٹھہ گنلیاں کے شہریوں کے خلاف بجلی چوری کرنے اور عملے کے ساتھ بدتمیزی کرنے پر تھانہ فیکٹری ایریا کوٹ عبدالمالک میں مقدمہ درج کر دیا جس کا شہریوں کو سخت رنج ہوا جن کی بڑی تعداد نے جمع ہو کر فیض پور انٹرچینج کے قریب ٹریفک بلاک کر دی۔ دوسری طرف شرقپور اور گردونواح میں بجلی کی بدترین اور غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے۔ شہر میں بندش کا دورانیہ 14 گھنٹے سے بھی تجاوز کرنے پر شہریوں نے شدید احتجاج کیا۔