ایران پر مزید پابندیاں لگائی جائیں‘ عرب لیگ: شام میں کیمیائی حملے کی عالمی انکوائری کا مطالبہ

17 اپریل 2018

ریاض (بی بی سی) سعودی عرب میں منعقدہ القدس سربراہ کانفرنس نے عربوں کو دہشتگردی کے خلاف حصار قائم کرنے اور فلسطینی ریاست کے قیام کے لئے بھرپور تعاون کے عزم کا اعلان کردیا۔ عودی اخبار کے مطابق عرب قائدین نے مشترکہ طور پر جاری اعلامیہ میں اس عزم کا اظہار کیا کہ عرب ممالک کو درپیش خطرات اور ان کے امن و استحکام کو متزلزل کرنے والے حالات سے نمٹنے کے لئے مشترکہ عرب جدوجہد کو مضبوط کیا جائے گا۔ مسئلہ فلسطین کے لئے درکار مدد پیش کرنے کا عہد کیا۔ عرب سربراہوں نے پڑوسی ممالک سے کہا کہ وہ عرب ممالک کی خودمختاری کا پاس کریں۔ عرب قائدین نے اس امر پر زور دیا کہ مشرق وسطیٰ میں جامع اور مبنی بر انصاف امن عرب امن فارمولے کی بنیاد پر ہی قائم ہوسکتا ہے۔ عربوںکی قومی سلامتی کے تحفظ کے لئے مطلوب حکمت عملی کی حمایت کا بھی اظہار بھی کیا۔ اقتصادی ترقی کیلئے مشترکہ عرب جدوجہد کا طریقہ کار جلد از جلد متعین کرنے کا بھی عزم ظاہر کیا۔ عرب قائدین نے تمام ممالک سے مطالبہ کیا کہ کوئی بھی اپنا سفارتخانہ القدس منتقل کرے اور نہ ہی القدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرے۔ سعودی عرب کے شہر دہران میں عرب لیگ کے رہنمائوں نے کانفرنس کے اختتام پر شام میں کیمیائی حملے کے استعمال پر عالمی سطح پر تحقیق کا مطالبہ کیا ہے۔ مشترکہ بیان میں کہا گیا کہ ہم اپنے شامی بھائیوں پر استعمال ہونے والے کیمیائی حملے کی بھرپور مذمت کرتے ہیں اور عالمی برادری سے مطالبہ کرتے ہیں کہ اس واقعہ کی آزادانہ تحقیقات کرائی جائے تا کہ بین الاقوامی قوانین کی پاسداری ہو۔ شام میں جاری جنگ کے خاتمے کے لئے سیاسی حل ڈھونڈنے پر زور دیا گیا۔ دستاویز میں ایران پر اضافی پابندیاں لگانے کا بھی مطالبہ کیا گیا اور تہران کو پیغام دیا گیا کہ وہ شام اور یمن سے اپنے جنگجو واپس بلائے۔

EXIT کی تلاش

خدا کو جان دینی ہے۔ جھوٹ لکھنے سے خوف آتا ہے۔ برملا یہ اعتراف کرنے میں لہٰذا ...