پنجاب کی پانچ سالہ منصوبہ بندی عام آدمی کے مسائل کا احاطہ کرتی ہے: عائشہ غوث پاشا

17 اپریل 2018

لاہور(کامرس رپورٹر) صوبائی وزیر خزانہ ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا نے کہا ہے کہ پنجاب کی پانچ سالہ ترقیاتی منصوبہ بندی عام آدمی کے مسائل ہی کا احاطہ کرتی ہے ۔ امن و امان، توانائی، زراعت اور پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ تمامتر عوامی ترجیحات ہیں۔ غربت، ملازمت اور خوراک کی کمی جیسے مسائل کا حل لوڈ شیڈنگ کے خاتمے، کاروبار کے فروغ اور زرعی پیداوار میں اضافے پر ہی منحصر ہے۔پالیسی سازی میں بلدیاتی حکومتوں کی نمائندگی کو یقینی بنا رہے ہیں۔ سروس ڈیلیوری میں بہتری کے لیے کمپنیوں کا قیام نا گزیر تھا۔ ایچ آر کا انتخاب مسابقتی عمل کے تحت خالصتاً میرٹ کی بنیاد پر کیا گیا۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہار گزشتہ روزنیشنل سکول آف پبلک پالیسی کے 108ویں نیشنل مینجمنٹ کورس کے شرکاء سے ملاقات کے دوران کیا۔ اس موقع پر چیئرمین پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ جہانزیب خان، ریکٹرنیشنل سکول آف پبلک پالیسی عظمت علی رانجھا، چیف انسٹریکٹر نجیب نجمی ایڈیشنل چیف سیکرٹری ہوم، سیکرٹری فنانس ،ہیلتھ ، انڈسٹریز اور دیگر محکموں کے نمائندگان شریک تھے ۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ 110ملین کی آبادی کے صوبہ میںخدمات کی فراہمی ایک بڑا چیلنج ہے جسے حکومت پنجاب پورا کر رہی ہے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ بلدیاتی نمائندوں کی شمولیت کے بغیر موثر پالیسی سازی ممکن نہیں۔ چیئرمین پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ جہانزیب خان نے بتایا کہ ترقیاتی منصوبہ بندی کے تحت صوبے میں عام آدمی کو سہولیات کی فراہمی میں 90% بہتری آئی۔ ایڈیشنل سیکرٹری ہوم اور سیکرٹری پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ نے شرکاء کو امن عامہ اور صحت کے میدان میں حاصل ہونے والی کامیابیوں سے آگاہ کیا۔ ہوم سیکرٹری نے بتایا کہ پنجاب میں نیشنل ایکشن پلان کے تحت متعارف کروائی جانے والی اصلاحات کے نتیجہ میں دہشت گردی کے واقعات میں 76فیصد تک کمی ہوئی۔