سندھ اسمبلی کے باہر وکلا پر کریک ڈائون‘ متعدد گرفتار‘ احتجاج ختم

17 اپریل 2018

کراچی (کرائم رپورٹر) سندھ اسمبلی کے باہر احتجا ج کرنے والے سرکاری وکلاء اور اساتذہ کے خلاف پولیس نے کریک ڈائون کردیااور مظاہرین کو حراست میں لے کراحتجاج ختم کرادیا۔سندھ اسمبلی کے مرکزی دروازے پر سرکاری وکلاء 8 روز سے الاوئسنس نہ ملنے کے خلاف احتجاج کررہے تھے جبکہ نیوٹیچرز ایکشن کمیٹی نے 2012ء سے تنخواہیں نہ ملنے پر سندھ اسمبلی کے باہر دھرنا د ے دیا تھا۔ دونوں احتجاج کے باعث آرٹس کونسل سے سندھ سیکریٹریٹ جانے والی سڑک پرٹریفک کی روانی متاثر ہورہی تھی۔ پولیس ایکشن کے بعد 8 روز سے جاری دھرنا ختم ہوگیا اور سندھ اسمبلی کے مرکزی دروازے کو کلیئر کردیا گیا۔ پولیس کے مطابق49 وکلاء کو گرفتار کیا گیا اور ان کے خلاف تھانہ آرام باغ میں مقدمہ درج کیا گیا ہے۔