آئین پر فائر نہیں کرسکتے، اسے پھاڑنے والوں کیخلاف ہیں، کیپٹن صفدر

17 اپریل 2018

اسلام آباد (نامہ نگار) سابق وزیر اعظم نواز شریف کے دامادکیپٹن ریٹائرڈ صفدر نے کہا ہے کہ عدالت عظمی کے جج کے گھر فائرنگ کرکے کسی نے بڑا گھٹیا کام کیا گیا،ہم آئین پر فائر نہیں کر سکتے، ہم تو ان لوگوں کے خلاف ہیں جو آئین کو پھاڑ کر پھینک دیتے ہیں، ان خیالات کا اظہار انہوں نےاحتساب عدالت پیشی کو موقع پر میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے کیا۔ کیپٹن ریٹائرڈ صفدرکہا ہے کہ گذشتہ روز عدالت عظمی کے جج صاحب کے گھر فائرنگ کرکے کسی نے بڑا گھٹیا کام کیا ہے،انہوں نے کہا کہ وہ نہ صرف جج ہیں یہ تمام عدالتیں اور ججز پاکستان کی امانت ہیں ہمیں ان سب کی حفاظت کرنی چاہیے، ہم آئین بنانے اور اس کی تشریح کرنے والوں کے ساتھ ہیں اور آئین کے تابعدار ہیں،دیکھنا پڑے گا قوم کو کہ یہ کیا ہوا ہے جمہوریت کے خلاف سازش ہے، کیپٹن ریٹائرڈ صفدرنے کہا کہ اس کی کو دیکھا جائے تو یہ کیس بھی آئین کے آرٹیکل 6 پیرا 2 میں آتا ہے، انہوں نے کہا کہ ایک جمہوری حکومت کے خلاف جے آئی ٹی نے سازش کی،کس نے سازش کروائی یہ آنے والا وقت بتائے گا، جے آئی ٹی کی رپورٹ کہاں اور کیسے بنی سب کو پتہ ہے،انہوں نے کہا کہ سازش کا مقصد یہ تھا کہ 14اگست سے پہلے نواز شریف کو گھر بھیجا جائے، اس طرح عوام کے ووٹ کی تذلیل کی جائے جو انہوں نے کر لیا،انہوں نے کہاکہ اب یہاں کچھ ثابت نہیں ہو رہاپہلے وقتوں میں مارشل لا لگ کر وزیراعظم گھر جاتے تھے،پہلے 58ٹو لگ کر وزیر اعظم گھر جاتے تھے اس دفعہ جے آئی ٹی لگ کر وزیر اعظم گھر چلے گئے۔