سر گودھا :20 افراد کے قتل مقدمہ کی سماعت روزانہ کی بنیاد پر شروع

17 اپریل 2018

حیدرآبادٹاؤن(آن لائن)نواحی گاؤں 95شمالی میں ایک سال قبل دربار محمد علی گجر پر ہونے والے بیس افراد کے قتل کے مقدمہ کی سماعت اہم موڑ میں داخل انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے بیس افراد کے مقدمہ قتل کی سماعت روزانہ کی بنیاد پر شروع کردی عدالت نے مقدمہ کی سماعت آج 17 اپریل تک ملتوی کرتے ہوئے مقدمہ کے مزید چشم دید گواہان کو اج کیلئے طلب کرلیا ہے گزشتہ روز انسداد دہشت گردی سرگودھا کی خصوصی عدالت کے جج نے دربار پر ہونے والے بیس افراد کے مشہور مقدمہ قتل کی سماعت کی وکلاء کونسل کے پیش نہ ہونے کے باعث مقدمہ قتل کے چشم دید گواہ ان کی شہادتیں قلمبند نہ ہوسکی جس پر سماعت آج تک ملتوی کرتے ہوئے مقدمہ کے دیگر گواہان کو بھی طلب کر لیا ہے بیس افراد کے قتل میں ملوث جیلی پیر عبدالحمید اور اس کے ساتھیوں کو انتہائی سخت سکیورٹی میں ڈسٹرکٹ جیل سرگودھا سے لاکر عدالت کے سامنے پیش کیا گیا ملزمان پر قبل ازیں فرد جرم عائد ہو چکی ہے یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ نواحی چک 95شمالی کے دربار پر جیلی پیر عبدالحمید اور اس کے ساتھیوں نے 20 افراد کو قتل کر دیا تھا تھانہ صدر پولیس نے 20 افراد کے قتل کے مقدمہ کاچالان اور دیگر شواہد عدالت کے سامنے پیش کئے جن میں مقتولین کے ڈی این اے ٹیسٹ کے نمونہ جات بھی شامل ہیں۔

نفس کا امتحان

جنسی طور پر ہراساں کرنے کے خلاف خواتین کی مہم ’می ٹو‘ کا آغاز اکتوبر دو ...