سپریم کورٹ کے احکامات 20 عطائی گرفتار ، 24 کلینک سربمہر

17 اپریل 2018

خان پوربگا شیر ، کوٹ ادو ، خان گڑھ ، اڈا پل 14، ساہوکا ، قصبہ بصیرہ ، کرم پور ، کوٹ اسلام ، دنیا پور (نامہ نگار ، خبر نگار) سپریم کورٹ کے احکامات پر ملک بھر کی طرح جنوبی پنجاب کے مختلف علاقوں میں عطائیوں کے خلاف کارروائی شروع ، مختلف اضلاع کے 20 عطائی گرفتار ، 24 دکانیں سربمہر کر دی گئیں ۔ متعدد فرار ، نوٹس جاری کر دئیے گئے ۔ خان پور بگا شیر سے نامہ نگار کے مطابق ڈرگ انسپکٹر مظفر گڑھ رضا شاہد نے گذشتہ روز خانپور بگا شیر میں ملک کلینک اینڈ گائنی کئیر سنٹر پر چھاپہ مار کر ایکسپائیر ادویات قبضہ میں لے کر کلینک سیل کر دیا۔کلینک کے مالک ڈاکٹر سجاد عطائی نے عرصہ دراز سے کلینک کو غیر قانونی کاموں کا مرکز بنا رکھا تھا۔نشہ آورادویات کے خرید و فروخت بھی دھڑلے سے کرتا رہا ہے جبکہ باقی عطائی ڈرگ انسپکٹر کے چھاپے کی خبر سن کر کلینک بند کر کے روپوش ہو گئے ۔اہل علاقہ نے سپریم کورٹ کے احکامات پر عطایئوں کے خلاف آپریشن کلین اپ کے اقدامات پر خراج تحسین پیش کیا۔کوٹ ادو سے خبر نگار کے مطابق چیف جسٹس آف پاکستان ثاقب نثارکے حکم پرعطائیوں کی گرفتاری پرعملدرآمد شروع ہو گیا ہے،گزشتہ روزڈپٹی ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسرڈاکٹر طارق جمشیدنے کوٹ ادو شہر کے مختلف علاقوں میں عطائیوں کیخلاف کریک ڈائون کرتے ہوئے محلہ ککے والا عطائی حسنین عمر بھٹہ کو گرفتار کرلیا، واقع کی پیشگی اطلاع ملنے پر عطائی کلینکس چھوڑ کر فرار ہوگئے جس پر کاروائی کرتے ہوئے ڈپٹی ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسرڈاکٹر طارق جمشید نے کلینکس سیل کردئے پولیس تھانہ کوٹ ادو نے ڈپٹی ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسرڈاکٹر طارق جمشید کی مدعیت میں مقدمہ درج۔ خان گڑھ سے نامہ نگار کے مطابق محکمہ ہیلتھ مظفرگڑھ اور پولیس کی مشترکہ کارروائی کے نتیجہ میں ضلع بھر میں عطائیوں کی دوڑیں لگ گئیں اور متعدد کو گرفتار کر لیا گیا ہے ۔اڈا پل 14 سے نامہ نگار کے مطابقسپریم کورٹ کے پل 14،جہانیاں ،ٹھٹھہ صادقآباد سمیت مختلف چکوک میں ڈرگ انسپکٹر اور ڈپٹی ڈی ایس او ڈاکٹر محسن نے عطائی کے خلاف مہم تیز کردی اس سلسلے میں 8عطا ئی کو سیل کردیا اور تین کو نوٹس جاری کیا ہے شہریوں نے میڈیا کو بتایا کہ میڈیکل سٹوروں کے اکثر مالکان کے پاس لائسنس نہیں ہے وہ ممنوعہ اور نشہ آور ادویات کی فروخت کر رہے ہیں ان کے خلاف بھی آپریشن اور کارروائی ہونی چائیے ۔ساہوکا سے نامہ نگار کے مطابق سیکرٹری ہیلتھ علی جان خان نے تمام اضلاع کے چیف ایگزیکٹو آفیسر،ڈی ڈی او ہیلتھ کو اپنی اپنی سطح پر فوری اپریشن کا آغاز کرنے کے احکامات جاری کر دیئے ہیں تاہم علاقائی معلومات نہ ہونے پر آپریشن میں مشکلات کا سامنا ہے متعلقہ ڈرگ انسپکٹر کے مبینہ ماہانہ منتھلی سسٹم سے ان علاقوں میں آپریشن ناکام ہونے کے خدشات ہیں ڈرگ انسپکٹر کو مبینہ ماہانہ منتھلی دینے والے عطائیوں کے کلینک بدستور کھلے جبکہ منتھلی نہ دینے والے عطائیوں نے اپنے کلینک بند کر دیئے ہیں یاد رہے ساہوکا فتح شاہ ،جملیرا ،عمر پور بنگلہ و نواحی چکوک میں عطائیوں کی تعداد سینکڑوں ہے تاہم زرائع سے معلوم ہوا ہے کہ منتھلی دینے والوں کو تحفظ فراہم کرنے کیلئے دوسرے عطائیوں کی لسٹیں مرتب کی جارہی ہیں عوامی وسماجی حلقوں نے اعلی حکام سے عطائیوں کے خلاف بلاامتیاز آپریشن کا مطالبہ کیا ہے ۔ قصبہ بصیرہ سے نامہ نگار کے مطابق کرمدادقریشی میں اتائیوں کے خلاف تھانہ کرمدادقریشی پولیس کا آپریشن۔ پولیس نے 6 افراد کو گرفتار کیا۔ جن میں 2 کوالیفائڈ ایک حکیم اور ایک ڈسپنسرکو بھی گرفتار کرکے تھانہ میں بٹھائے رکھا۔ جنہوں نے اپنی سندیں وغیرہ بھی چیک کروائیں لیکن 6 گھنٹے تک بٹھائے رکھا۔ تاہم ڈپٹی ڈی ایچ او ڈاکڑ امیربخش نے ان سب کے کلینکوں کا وزٹ کیا اور اسناد چیک کیں۔ ڈاکڑامیربخش نے حکیم جاوید اور ڈسپنسر کو چھوڑ دیا۔ جبکہ اصغر، خالد اور آصف کے کلینکوں کو موقع پر سیل کردیا۔ اس موقع پر حکما فاونڈیشن کے ممبران حکیم مہررفیق احمد، حکیم مہر شفیق احمد، حکیم علی، حکیم اللہ وسایا، حکیم فاروق، حکیم میاں مختیار، حکیم غضنفر ودیگر نے شدید احتجاج کرتے ہوئے ڈی پی او مظفرگڑھ اور ڈی سی مظفرگڑھ سے مطالبہ کیا ھے کہ یہ کیسا انصاف ھے کہ پولیس کوالیفائڈ حکماء کو بھی گرفتار کررہی ہے۔ اتائیوں کے خلاف آپریشن اچھا اقدام ھے مگر کوالیفائڈ حکماء کو گرفتار نہ کیا جائے ورنہ ہم شدید احتجاج کریں گئے۔ کرم پور سے نامہ نگار کے مطابق پانچ عطائیوں کو گرفتار کر لیا گیا ہے،درجنوں عطائی کلینکس بند کر کے روپوش ہو گئے ہیں،یہ بات سی ای او صحت وہاڑی ڈاکٹر شعیب الرحمن گرمانی نے صحافیوں کو بتائی ، انہوں نے بتایا کہ عطائیوں کے خلاف مہم جاری ہے روزانہ کی بنیاد پر کاردکردگی چیک کی جارہی ہے،میڈیکل سٹورز سے ادویات کے نمونہ جات حاصل کیے جارہے ہیں،غیر قانونی پریکٹس کرنے والے سٹور زمالکان کے خلاف بھی کاروائی کی جارہی ہے غیر قانونی پریکٹس کرنے والوں اور عطائیوں کو نہیں چھوڑا جائے گا۔کوٹ اسلام سے نامہ نگار کے مطابق عطائیوں کے خلاف کاروائیوں کے دوران گذشتہ رو زتھانہ حویلی کورنگا پولیس نے محمداسلم نوناری کو گرفتار کرلیا جبکہ اکثر عطائی دوروز سے اپنی دکانوں سے غائب ہوچکے ہیں۔ دنیا پور سے نامہ نگار کے مطابق سپریم کورٹ کی ہدایات کی روشنی میں محکمہ صحت کی طرف سے عطائی ڈاکٹروں کے خلاف مہم کے دوران دنیاپور اور گردونواح کے کء عطائی اپنے کلینک چھوڑ کر فرار اور دو کو موقع پر ہی گرفتار کر لیا گیا تھا کے خلاف پولیس نے مقدمات درج کر لیئے ہیں جن پانچ افراد کے خلاف مقدمات درج کیے گئے ہیں ان میں چکنمبر355 ڈبلیو بی کے رہائشی فاروق۔چکنمبر337ڈبلیو بی کے منظور۔قطب پور کے عبدالغفور۔اور حبیب الرحمن وغیرہ شامل ہیں ۔
عطائی آپریشن