سی پیک کے اقتصادی زونز میں سرمایہ کاری کرنیوالوں کو یکساں خصوصی مراعات ملیںگی

17 اپریل 2018

اسلام آباد (اے پی پی) سی پیک منصوبے کے تحت پاکستان میں خصوصی اقتصادی زونز میں صنعتیں قائم کرنے والے پاکستانی ،چینی اور غیر ملکی سرمایہ کاروں کو یکساں خصوصی مراعات حاصل ہوں گی۔ سی پیک سیکرٹریٹ کے ذرائع کے مطابق خصوصی اقتصادی زونز میں صنعتیں قائم کرنے والے پاکستانی، چینی اور غیر ملکی سرمایہ کاروں کو ڈیوٹیوں اور ٹیکسوں سے استثنیٰ اور رعایتی قرضوں سمیت خصوصی مراعات حاصل ہوں گی۔ ذرائع کے مطابق تمام زونز میں پاکستان کی مقامی صنعت کو بھی فوقیت دی جائے گی اورحکومت پاکستان نے چین کے کاروباری اداروں سمیت دلچسپی رکھنے والے سرمایہ کاروں کی ترغیب کے لئے ایک پالیسی پیکج تیار کیا ہے۔رعایتی پیکج میں خصوصی اقتصادی زونز میں تنصیب کے لئے پاکستان درآمد کی جانے والی مشینری اور پلانٹ پر تمام کسٹم ڈیوٹیاں اور ٹیکسوں سے ایک مرتبہ چھوٹ شامل ہے۔ ذرائع نے بتایاکہ خصوصی اقتصادی زونز میں رشکئی خیبرپی کے، ڈھابے جی سندھ، بلوچستان میں بوستان انڈسٹریل زون، علامہ اقبال انڈسٹریل سٹی فیصل آباد، گلگت میں مقپونداس، اسلام آباد میں آئی سی ٹی ماڈل، سندھ میں پورٹ قاسم ، فاٹا اور میرپور آزاد کشمیر میں مہمند ماربل سٹی شامل ہیں۔ پاکستان چین اقتصادی راہداری منصوبے کے تحت قائم صنعتی پارکس میں گیس ، بجلی ، پانی و دیگر سہولتیں اور کام کے دوران سہولیات فراہم کی جائیں گی۔ انہوں نے بتایاکہ ہر ایک زون میں پاکستانی لیبر لاز لاگو ہوں گے اور کام کرنے والے افراد کے لئے وہاں پر ووکیشنل اینڈ ٹیکنیکل سنٹرز قائم کئے جائیں گے۔ چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبے کے تحت گوادر انٹرنیشنل ائرپورٹ اور ڈی سیلینیشن پلانٹ کا سنگ بنیاد رواں ماہ رکھا جائے گا،ایکسپریس وے اورگوادر فری زون و پورٹ ڈویلپمنٹ سمیت مختلف منصوبوں پر کام جاری ہے۔ سی پیک سیکرٹریٹ کے حکام کے مطابق گوادر میں آب نوشی کے لئے ڈی سیلینیشن پلانٹ کے قیام اور دیگر منصوبوں کی مکمل تکمیل کے ساتھ ساتھ خضدار، بسیمہ اور ژوب، ڈیرا اسماعیل خان شاہراہوں کے منصوبوں پر پیشرفت ہورہی ہے۔ انہوں نے بتایاکہ وفاقی حکومت نے رواں مالی سال کے دوران چین پاکستان اقتصادی راہداری کے لئے سرکاری شعبہ کے ترقیاتی پروگرام کیلئے خطیر رقم مختص کی ہے۔
سی پیک/رعایتیں