ایم کیو ایم نے کراچی کیلئے 10 بسوں کے اعلان کو مضحکہ خیز قرار دیدیا

17 اپریل 2018

کراچی (خصوصی رپورٹر) متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کی رابطہ کمیٹی نے حکومت سندھ کی جانب سے لانڈھی سے لیکر میٹروپول ہوٹل تک صرف دس بسیں چلانے کے اعلان کو مضحکہ خیز قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ کراچی جیسے میگا سٹی شہر میں دس بسیں چلانے کا اعلان اونٹ کے منہ میں زیرے کے مترادف قرار دیا ہے ۔ ایک بیان میں رابطہ کمیٹی نے کہا کہ کراچی میں لاکھوں کی تعداد میں عوام اپنے کاروبار ، دفاتر ، اسکول ، یونیورسٹیز ، کالجز اور دیگر کام کاج کیلئے بھیڑ بکریوں کی طرح بسوں اورمنی بسوں میں سفر کرنے پر مجبور ہیں لیکن حکومت سندھ گزشتہ دس سال کے دوران بھی شہر میں ٹرانسپورٹ کا مسئلہ حل کرنے میں ناکام ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے ۔رابطہ کمیٹی نے کہاکہ حکومت سندھ کی جانب سے ٹرانسپورٹ کی مد میں لانڈھی سے لیکر میٹروپول تک صرف دس بسیں چلانا شہریوں کے زخموں پر نمک پاشی کے مترادف ہے جبکہ ہونا تو یہ چاہئے تھا کہ کراچی جیسے میگا سٹی میں ٹرانسپورٹ کے بڑھتے ہوئے سنگین ، گھمبیر اوربد ترین مسائل کو دیکھتے ہوئے جدید سہولیات سے میسر بسیں کم از کم ایک ہزار کی تعداد میں چلائی جاتیں لیکن افسوسناک صورتحال یہ ہے کہ پیپلزپارٹی کی حکومت سندھ نے کراچی میں موجودٹرانسپورٹ کے مسئلے سے لیکر ہر مسئلے کو مزید سرخ فیتے کی نذرکیا ہے اور شہر کو تباہ و برباد کردیا ہے جس سے ثابت ہوتا ہے کہ حکومت سندھ کراچی میں مسائل کے حل کیلئے سنجیدہ نہیں۔
ایم کیو ایم بسیں