واہگہ بارڈر پر دہشت گردی کا پھر خطرہ‘ لاہور ایئرپورٹ بھی نشانہ بن سکتا ہے

16 نومبر 2014

لاہور (معین اظہر سے) واہگہ باڈر ایک مرتبہ پھر دہشت گردی حملہ کی زد میں آسکتا ہے، دہشت گرد واہگہ باڈر پر دوبارہ حملہ کی پلاننگ کر رہے ہیں جبکہ علامہ اقبال انٹرنیشنل ائرپورٹ، غیرملکی سکول اور آئی ایس آئی سنٹر بارہ کہو کو بھی ٹارگٹ کیا جاسکتا ہے۔ وزارت داخلہ نے حساس ایجنسیوں کی اطلاعات پر وزیراعلیٰ پنجاب اور دیگر کو اس بارے میں تفصیلات فراہم کردی ہیں جبکہ سکیورٹی انتہائی سخت کرنے کی ہدایات جاری کی گئی ہیں۔ چند روز قبل واہگہ باڈر پر خود کش حملہ ہوا تھا جس میں تقریباً 62 افراد جاں بحق ہو گئے تھے۔ وزارت داخلہ کی طرف سے لیٹر جاری ہونے کے بعد ہوم ڈیپارٹمنٹ پنجاب کے ایڈیشنل سیکرٹری انٹرنل سکیورٹی نے کمشنر لاہور اور سی سی پی او لاہور کو لیٹر لکھا ہے جس میں لکھا ہے کہ اطلاعات ملی ہیں کہ دہشت گرد واہگہ بارڈر پر دوبارہ حملہ کرنے کے بعد دہشت گردی کا نشانہ بنانے کی پلاننگ کر رہے ہیں۔ اسی لیٹر میں انہوں نے کمشنر راولپنڈی کو کہا ہے کہ دہشت گرد آئی ایس آئی سنٹر بارہ کو بھی ٹارگٹ کرنے کی پلاننگ کر رہے ہیں۔ اس کے لئے انہوں نے خصوصی ہدایات دی ہیں کہ فول پروف سکیورٹی اور خصوصی اقدامات واہگہ باڈر پر کئے جائیں تاکہ کسی بھی واقعہ کی روک تھام ہو سکے۔ اس کے علاوہ وزارت داخلہ نے ایک اور رپورٹ پنجاب حکومت کو بجھوائی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ علامہ اقبال انٹرنیشنل ائیرپورٹ کو دہشت گرد ٹارگٹ کر سکتے ہیں خصوصا کسی فلائیٹ کی ٹیک آف یا لینڈنگ کے وقت اسلئے ائیرپورٹ کے اردگرد کے علاقوں ائیر پورٹ جانے والے تمام راستوں پر سکیورٹی انتہائی سخت کر دی جائے۔ اس رپورٹ پر کہا گیا ہے ائیرپورٹ کے اردگرد کے علاقوں کا سرچ آپریشن کیا جائے۔ وہاں پر رہنے والوںکے کوائف جمع کئے جائیں پولیس کو وہاں پر ناکے لگا کر تمام افراد کو سرچ کرنے کی ہدایات دی جائیں۔ اسی کے علاوہ ایک اور لیٹر وزارت داخلہ کی طرف سے موصول ہوا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ القاعدہ کسی غیر ملکی سکول کو ٹارگٹ کرنا چاہتی ہے جس میں اس سکول کے ٹیچرز کو ٹارگٹ کیا جائے گا جس پر لاہور میں تمام غیر ملکی سکولوں، خصوصاً امریکن سکول کی سکیورٹی ان کے سٹاف سکیورٹی کو سخت کرنے کی ہدایات جاری کی گئی ہیں۔