اپنی زندگیاں اللہ کے احکامات کے مطابق ڈھالنا مسلمانوں پر فرض ہے‘ حاجی عبدالوہاب کا تبلیغی اجتماعی سے خطاب

16 نومبر 2014

رائیونڈ (نامہ نگار) دنیا مومن کیلئے قید خانہ ہے، یہاں اللہ کی مرضی کے مطابق ہی چلنا پڑتا ہے، دنیا کی محبت سب سے بڑی خطا ہے۔ اللہ کی زمین پر رہتے ہوئے وہی انسان فلاح پاتا ہے جو اللہ تعالیٰ کے احکامات کے مطابق زندگی بسر کرتا ہے، دنیا عیاشی کی جگہ نہیں بلکہ صالح اعمال اختیار کرکے جنت کے حصول کیلئے بنائی گئی امتحان گاہ ہے، شیطان ہمارا ازلی دشمن ہے وہ قیامت تک کیلئے انسانیت کو گمراہ کر کے دوزخ میں دھکیلنے کی جستجو میں لگا ہوا ہے، شیطان کے اقوال پر چل کر دنیا کی ترقی چاہنے والے صریحاً گھاٹے میں ہیں، دنیا اور آخرت میں وہی لوگ سرخرو ہوں گے جنہوں نے اپنی زندگی نبی اکرم  ؐ کے اسوہ حسنہ کو مدنظر رکھتے ہوئے گزاری۔ ان خیالات کا اظہار تبلیغی اجتماع کے دوسرے مرحلے کی آخری نشست سے بھارت سے آئے مولانا محمد سعد نے کیا، صبح کی نشست میں مرکزی امیر حاجی عبدالوہاب نے کہا کہ اللہ تعالیٰ کی ذات مبارکہ پر مکمل یقین اور نبی آخرالزمان  ؐ کا طریقہ زندگی اپنانے میں ہی انسانیت کی بھلائی ہے، اللہ کی سرزمین پر بسنے والی ہر مخلوق اس کی تابع رہنے کی پابند ہے، اپنی مرضی سے جنت اور دوزخ کا فیصلہ کرنے کا اختیار اللہ تعالیٰ نے بنی نوع انسان کو دیا ہے، انسان اپنے اعمال کی وجہ سے دوزخ میں جائے گا یا جنت الفردوس کا حقدار ٹھہرے گا ۔ انہوں نے کہا کہ مسلمان کہلوانے والوں پر فرض ہے کہ وہ اپنی زندگیوں کو اللہ تعالیٰ کے احکامات اور محمد الرسول اللہ ؐکی سنت مبارکہ کے مطابق ڈھالیں۔ مولانا محمد احمد بہاولپوری نے کہا کہ قرآن پاک میں حضرت ابراہیم علیہ السلام کی لازوال قربانیوں کا ذکر ہمارے لئے مشعل راہ ہے جو ہمیں درس دیتا ہے کہ جب بھی دین الٰہی کی خاطر جان ہ مال وقت لگانے کی ضرورت پڑے تو امت مسلمہ اس سے گریز نہ کرے ۔ مولانا جمیل احمد نے بعدازنماز ظہر اپنے بیان میں کہا کہ ہر مسلمان کے ذمے ہے کہ وہ اپنے دل میں دوسرے مسلمان بھائی کیلئے اخلاص رکھے اور خود بھی اپنے اعمال کو سنت رسول اللہؐ کے مطابق چلائے وہ دوسرے مسلمان بھائی کو اس کی تبلیغ کرے تاکہ ساری امت جنت کی وارث بن جائے، نماز عصر کے بعد مغرب تک بھارت کے عالم دین مولانا ظہیرالحسن کا مفصل خطاب ہوا جس میں انہوں نے کہا کہ پوری کائنات میں بسنے والے مسلمان امت واحدہ ہیں وہ ایک ارب سے زائد نفوس پر مشتمل ہیں مگر یہودوہنود کے طرز زندگی کو اپنا کر اور نبی اکرمؐ کے اسوہ حسنہ کو چھوڑ کر ذلت و خواری کا شکار ہوچکے ہیں، تبلیغی جماعت پوری دنیا میں یہ فریضہ انجام دے رہی ہے کہ ذہنی انتشار میں مبتلا انسانوں خصوصاً مسلمانوں کو اللہ تعالیٰ کے احکامات اور نبی مکرم  ؐ کے پیارے طریقوں پر عمل کرنے کی ترغیب دی جائے تاکہ بکھری ہوئی امت میں جوڑ پیدا ہوج ائے ، پنڈال میں حلقہ کی سطح پر تعلیم اور ہدایات کا سلسلہ جاری رہا ، مرکزی امیر حاجی عبدالوہاب نے ہدایات اور مولانا جمشید علی خان (مرحوم )کے فرزند ارجمند مولوی عبیداللہ خو رشید نے تعلیم کی ذمہ داریاں نبھائیں۔ پنڈال کے حلقہ پندرہ میں گونگے بہرے افراد کو خصوصی پروفیسر حضرات اشاروں میں دین کی تبلیغ سے آشنا کرتے رہے ، پنڈال میں پانچ لاکھ سے زائد مندوبین نے بڑے انہماک سے بیانات سنے اور اپنے اعمال کو درست کرنے کی سعی کررہے ہیں، تبلیغی اجتماع کے دوسرے مرحلے کا اختتام آج صبح  9بجے امیر جماعت حاجی عبدالوہاب کی اجتماعی دعا سے ہوگا۔ دوسرے مرحلہ میں ہجوم زیادہ ہے ۔