ملتان: مفت چائے نہ پلانے پر طلباء نے ہوٹل مالک کو آگ لگا دی‘ حالت تشویشناک

16 نومبر 2014

ملتان+ لاہور (این آئی پی+ خصوصی رپورٹر) ملتان میں مفت چائے نہ پلانے پر کالج کے طلباء نے ہوٹل مالک کو پٹرول چھڑک کر آگ لگا دی، جھلسنے والے ہوٹل مالک کو تشویشناک حالت میں نشتر ہسپتال منتقل کردیا گیا۔ ممتاز آباد میں واقع نجی ہوٹل میں گورنمنٹ ٹیکنالوجی کالج کے طلباء چائے پینے جاتے اور پیسے دئیے بغیر آ جاتے۔ ہوٹل مالک نعیم کے چائے کے پیسے طلب کرنے پر طلبا نے پٹرول چھڑک کر آگ لگا دی۔ ڈاکٹروں کے مطابق ہوٹل مالک نعیم کا ساٹھ ستر فیصد جسم جھلس گیا ہے جس کے باعث اسکی حالت تشویشناک ہے۔ ملتان پولیس کے ترجمان کے مطابق چائے کے پیسے مانگنے پر ان طلبہ کا ہوٹل کے مالک سے جھگڑا ہوا۔ معین معاویہ اور دوسرے طلبہ کی ہوٹل کے مالک نعیم سے تلخ کلامی بڑھی تو انہوں نے مار پیٹ شروع کی اور پھر اس پر پٹرول چھڑک کر آگ لگا دی۔ مرکزی ملزم معین کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔ دوسری جانب وزیراعلیٰ پنجاب نے آر پی او ملتان سے رپورٹ طلب کر لی ہے۔ ذرائع کے مطابق ہوٹل مالک محمد نعیم بچوں کو ہراساں کرتا تھا۔ اس رنجش پر ملزمان نے اسے آگ لگائی‘ پولیس کا کہنا ہے کہ نعیم پر تشدد کرنے والے ملزمان کے علاوہ نعیم کے خلاف بھی مقدمہ درج کیا جائے گا۔