حکومت کا ریڈ زون کی سکیورٹی کیلئے صدارتی آرڈیننس لانے کا فیصلہ

16 نومبر 2014

اسلام آباد (نوائے وقت رپورٹ) حکومت نے ریڈ زون کی سکیورٹی کیلئے صدارتی آرڈیننس جاری کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ نجی ٹی وی نے ذرائع کے مطابق آرڈیننس کا مسودہ تیار کر لیا گیا۔ جس کے مطابق ہائی سکیورٹی زون کی سکیورٹی کے لئے اتھارٹی قائم کی جائے گی۔ اتھارٹی میں آئی جی، ڈی آئی جی، ڈپٹی کمشنر اور چیف کمشنر شامل ہوں گے۔ پولیس کو کسی کی بھی تلاشی لینے اور روکنے کا اختیار ہو گا۔ پولیس کے کام میں رکاوٹ ڈالنے پر سزا تجویز کی گئی ہے جو ایک ماہ قید اور ایک سے دو ہزار روپے جرمانہ ہو گا۔ ریڈ زون میں غیرقانونی طور پر داخل ہونے پر 6 ماہ قید یا 5 سے 10ہزار روپے جرمانہ ہو گا۔ غیرقانونی اجتماع پر تین سال قید اور 5سے 10ہزار روپے جرمانے کی سزا تجویز کی گئی ہے۔ اسلحہ لہرانے، خواتین اور بچوں کو ڈھال بنانے پر بھی سزا تجویز کی گئی ہے۔ ہائی سکیورٹی زون میں گندگی پھیلانے پر ایک سے دو ہزار روپے جرمانے کی تجویز ہے۔
صدارتی آرڈیننس