امریکہ کے پاس 1642 وار ہیڈز‘ 912 میزائل لانچرز اور جنگی جہاز ہیں

16 نومبر 2014

واشنگٹن(ثناءنیوز) امریکی محکمہ دفاع نے جوہری ہتھیاروں سے متعلق حکومتی رپورٹ منظر عام پر آنے کے بعد جوہری اسلحہ کے لیے بہتر انتظامات کرنے پر اصلاحات کرنے کے عزم کا اظہار کیا ہے۔غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق امریکی حکومت کی ایک رپورٹ میں جوہری اسلحہ کے انتظامات میں خامیوں کی نشاندہی کی گئی تھی رپورٹ کے مطابق سرد جنگ کے دوران ایٹمی ہتھیاروں سے لیس آبدوزوں ،بین البراعظمی میزائلوں اور جنگی جہازوں کے انتظامات اور نگرانی کے لیے سالانہ بجٹ میں 16 ارب ڈالر روپے مختص کیے جاتے تھے جس کی وجہ سے بہتر انتظامات ممکن تھے امریکی محکمہ خارجہ کے مطابق اس وقت امریکہ کے پاس 1642وار ہیڈز 912 میزائل لانچرز اور جنگی جہاز ہیں جبکہ روس کے پاس 1643 وار ہیڈز اور 1911 لانچرز ہیں روس کے ساتھ تحفیف اسلحہ کے معاہدہ کے نفاذ کے بعد امریکہ اور روس 2018ءتک جوہری ہتھیاروں میں کمی کر کے انہیں 1550 وار ہیڈز اور 700 میزائل لانچرز تک محدود کرنے کے پابند ہوں گے۔
امریکہ روس/ وارہیڈز