طواف کیلئے بنائے گئے عارضی مطاف کو ہٹانے کا آپریشن مکمل خانہ کعبہ کا براہ راست دیدار ممکن

16 مئی 2016

اسلام آباد (وقائع نگار خصوصی) مسجد الحرام کی توسیع کے جاری منصوبے کے دوران حجاج و معتمرین کی سہولت کے لیے بنائے گئے عارضی مطاف کو ہٹانے کا آپریشن گزشتہ روز مکمل کر لیا گیا۔ اب صحن حرم میں ایک گھنٹے کے دوران 19 ہزار کی بجائے 30 ہزار زائرین کعبہ کے طواف کی سعادت حاصل کر سکیں گے جبکہ مطاف کی تمام منازل میں ایک گھنٹے کے دوران ایک لاکھ 7 ہزار زائرین کے طواف کی گنجائش ہو گی۔ مسجد الحرام کے توسیعی و تعمیراتی منصوبے کے دوران عارضی مطاف کا استعمال 22 جولائی 2013ءکو شروع کیا گیا تھا۔ اب زائرین براہ راست خانہ کعبہ کے طواف اور دیدار کا شرف حاصل کر سکیں گے۔ حرمین شریفین کے نگران ادارے کے چیئرمین اور امام کعبہ الشیخ ڈاکٹر عبدالرحمان السدیس نے بتایا کہ عارضی مطاف کی مسماری کا آپریشن آٹھ مراحل میں 35 دنوں میں مکمل کیا گیا ہے‘ اس دوران اس کے 10 ہزار 489حصے‘ 84 عارضی ستون اور طواف کعبہ کے لیے استعمال ہونے والے چاروں پل گرا دئیے گئے ہیں۔ اس کام میں 580 کارکنوں اور 80 انجینئروں نے حصہ لیا۔ عارضی مطاف کی مسماری کا کام وقت مقررہ سے 20 دن پہلے ہی مکمل کر لیا گیا ہے۔
عارضی مطاف