فائرنگ، جھڑپ: امن کمیٹی کے 4 رضا کار خیبر ایجنسی، ایک ٹانک میں جاں بحق

16 مئی 2016

خیبر ایجنسی / ٹانک ( بی بی سی + نوائے وقت رپورٹ )خیبر ایجنسی میں حکام کا کہنا ہے طالبان مخالف امن کمیٹی کے دو گروپوں کے درمیان فائرنگ کے نتیجے میں چار افراد جاں بحق ہوگئے ہیں۔ پولیٹیکل انتظامیہ کے ایک اہلکار نے بتایا فائرنگ کا واقعہ لنڈی کوتل تحصیل کے دور افتادہ پہاڑی علاقے بازار ذخہ خیل میں پیش آیا۔ انہوں نے کہا توحید اسلام نامی حکومتی حامی امن کمیٹی کے دو کمانڈروں کے حامیوں کے درمیان کسی بات پر جھڑپ ہوئی جس پر دونوں طرف سے ایک دوسرے پر بھاری ہتھیاروں سے فائرنگ کی گئی۔ تاہم یہ معلوم نہیں ہوسکا مرنے والے افراد کا تعلق کس گروپ سے ہے۔ نوائے وقت رپورٹ کے مطابق ٹانک کے علاقے کوڑ میں فائرنگ سے امن کمیٹی کا رضا کار جاں بحق ہوگیا۔ پولیس کے مطابق ہفتہ کے روز عمر اڈہ میں بھی فائرنگ سے 2 رضا کار جاں بحق ہوگئے تھے۔ خیبر ایجنسی میں طالبان مخالف امن کمیٹی کے دو گروپوں کے درمیان فائرنگ کے نتیجے میں چار افراد جاں بحق ہوگئے۔ پولیٹیکل انتظامیہ کے مطابق گزشتہ شام لنڈی کوتل تحصیل کے دو افتادہ پہاڑی علاقے ذخہ خیل میں توحید اسلام نامی امن کمیٹی کے دو کمانڈروں کے حامیوں کے درمیان کسی بات پر جھڑپ ہوئی جس پر دونوں طرف سے ایک دوسرے پر بھاری ہتھیاروں سے فائرنگ کی گئی، فائرنگ کے نتیجے میں چار رضا کار جاں بحق ہوگئے۔
خیبر ایجنسی فائرنگ