نیشنل پارٹی کی قیادت نے خود کو احتساب کیلئے پیش کر دیا، تحقیقاتی کمیٹی قائم

16 مئی 2016

کوئٹہ (نوائے وقت رپورٹ) سربراہ نیشنل پارٹی میر حاصل بزنجو نے عبدالمالک بلوچ کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر ہمارے کسی رکن پر کرپشن ثابت ہوئی تو اس کیخلاف کارروائی ہو گی۔ پارٹی خوداحتسابی کے عمل سے گزر رہی ہے۔ ہم پارٹی کے تمام ارکان پارلیمنٹ کے اثاثوں کی تحقیقات کریں گے۔ ہمارے درمیان اگر کوئی کرپٹ ہے تو وہ پارٹی کا حصہ نہیں رہے گا، کچھ عناصر ہماری پگڑی اچھالنے کی کوشش کر رہے ہیں، کرپٹ عناصر کو میڈیا کے سامنے لایا جائے گا، پارٹی کی قیادت اپنے آپ کو احتساب کیلئے پیش کرتی ہے۔ لوکل گورنمنٹ کے فنڈز کی تحقیقات میں نیب سے بھرپور تعاون کیا جائے گا۔ انہوں نے کہاکہ کرپشن کی تحقیقات کے لئے طاہر بزنجو، جان محمد بلیدی، کبیر محمد پر مشتمل کمیٹی قائم کر دی ہے۔ میر حاصل بزنجو کا کہنا تھا کہ کچھ عناصر ہماری پگڑی اچھال رہے ہیں، کوئٹہ میں ہر سفید کپڑے پہننے والا نیشنل پارٹی کا ممبر نہیں، ہمارا دامن داغدار نہیں، کرپٹ لوگوں کو برداشت نہیں کریں گے، کرپشن کے خلاف ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ کسی کے خلاف کرپشن ثابت ہوئی تو سب سے پہلے پارٹی ایکشن لے گی۔ سابق دور کے 35ارکان اسمبلی کے خلاف تاحال کارروائی نہ ہونا افسوسناک ہے۔ سابق وزیراعلیٰ بلوچستان ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ نے کہا کہ مجھ پر ریکوڈک کو بیچنے کا الزام تھا جو سراسر غلط ہے۔ خود پر الزام لگانے والوں کو نوٹس بھیج دئیے ہیں۔ حاصل بزنجو نے کہا کہ خالد لانگو سے بات ہو گئی، وہ آج نیب کے سامنے پیش ہو جائیں گے۔ ہم پر الزام لگانے والوں کا کچا چٹھا میڈیا کے سامنے لائیں گے۔ یہ نہ سمجھا جائے کہ ہمارے ہاتھ بندھے ہوئے ہیں۔
نیشنل پارٹی