سعودی عرب سے روحانی رشتہ ہے، تحفظ کیلئے کسی قربانی سے دریغ نہیں کرینگے: ساجد میر

16 مئی 2016

لاہور (خصوصی نامہ نگار) امیرمرکزی جمعیت اہل حدیث سینیٹر پروفیسر ساجد میر نے کہا ہے کہ پاکستان سعودی عرب کے احسانات کا بدلہ نہیں چکاسکتا، مصیبت کے وقت جتنی فراخدلی اور مدد کا مظاہرہ سعودی عرب نے پاکستان کے لیے کیا،اتنا پاکستان کی طرف سے نہیں ہوا۔ سعودی عرب اور پاکستان دنیا میں دو ہی ملک ہیں جو عالم کفرکی آنکھوں کو کھٹکتے ہیں۔ان خیالات کا اظہارانہوں نے جامعہ دالگراں میں تحفظ حرمین شریفین کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ جس کی صدارت مولانا حافظ عبدالغفار روپڑی نے کی ۔ پروفیسر ساجد میر نے کہا کہ سعودی عرب سے ہماراروحانی اورایمانی رشتہ ہے جس کے تحفظ کیلئے کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کیا جائیگا۔ عبدالغفار روپڑی نے کہا کہ پاکستان کے تمام بحرانوں کا حل صرف اسلامی نظام کے نفاذ میں مضمر ہے۔پاکستان دنیا کا واحد ملک ہے جو اسلام کے نام پر حاصل کیا گیا مگر 69سال گزرنے کے باوجود اس میں اسلامی نظام نافذ نہ ہو سکا۔ سب مسلمان ایک دوسرے کے بھائی اور دست و بازو ہیں۔ دشمن ہمارے درمیان نفرتیں پیدا کرکے ہمارے اتحاد اور یکجہتی کو توڑنا چاہتا ہے،ہمیں دشمن کی افواہوں پر کان نہیں دھرنے چاہئیں۔ قاری یعقوب شیخ، پروفیسر عبدالرحمن لدھیانوی، پروفیسر میاں عبدالمجید، مفتی عبیداللہ عفیف، مولانا یوسف پسروری، رانا نصراللہ خان، مولانا شکیل الرحمن ناصر، بشیر سلفی، مولانا عبدالوحید شاہد روپڑی سلمان عادل، حاجی اللہ رکھا سابق ایم پی اے نے بھی خطاب کیا۔