وائلڈ لائف اور چڑیا گھر کی انتظامیہ نے ملازمین مستقل کرنے کا کیس لٹکا دیا

16 مئی 2016

لاہور(سپورٹس رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب اور پنجاب لیبر کورٹ کے احکامات کے باوجود محکمہ وائلڈ لائف اور چڑیا گھر انتظامیہ نے ڈیلی ویجز ملازمین کو مستقل کرنے کا کیس لٹکا دیا ۔ حکومت پنجاب نے دو سال قبل درجہ چہارم کے تمام سرکاری ملازمین کو مستقبل کرنے ے احکامات جاری کیے تھے تاہم لاہور چڑیا گھر کی انتظامیہ کی سست روی کے باعث 37 ڈیلی ویجز ملازمین مستقل نہیں ہو سکے تھے۔ ملازمین نے اپنے حق کے حصول کے لیے پنجاب لیبر کورٹ میں اپیل دائر کی تھی جس پر مئی 2014ء اور نومبر 2015ء کو ملازمین کے حق میں فیصلہ دیتے ہوئے ملازمین جن میں 16 واچ مین، 7 مالی، 6 سویئپر، ایک نائب قاصد، ایک جونیئر کلرک، ایک بکنک کلرک، ایک آپریٹر، ایک ڈرائیور اور ایک ویٹرنری اسسٹنٹ شامل ہیں کو مستقل کرنے کے لیے محکمہ وائلڈ لائف کو احکامات جاری کیے تھے تاہم دو سال گزرنے کے باوجود ملازمین ڈیلی ویجز کی تنخواہ لینے پر مجبور ہیں۔ ملازمین نے وزیر اعلیٰ پنجاب، چیف جسٹس ہائیکورٹ سے اپیل کی کہ ڈیلی ویجز ملازمین کا مستقبل محفوظ کیا جائے۔