گوجرانوالہ: برگر دینے سے انکار، اے ایس آئی کی دکاندار پر تھپڑوں کی بارش، دکان بند کرا دی سٹی پولیس افسر نے معطل کر دیا، رپورٹ طلب

16 مئی 2016

گوجرانوالہ (نمائندہ خصوصی) گوجرانوالہ پولیس نے مفت چیزیں کھانے کی انتہا کر دی، سیٹلائٹ ٹائون کے اے ایس آئی نے برگر دینے سے انکار کرنیوالے دکاندار پر تھپڑوں کی بارش کر کے اسکی دکان زبردستی بند کروا دی، تفصیل کے مطابق شہر کے پوش علاقہ سیٹلائٹ ٹائون کی مین مارکیٹ میں نوید نے برگر کی د کان بنا رکھی ہے، تھانہ سیٹلائٹ ٹائون کے شیر جوان سرکاری گاڑی میں آئے جنہوں نے دکاندار کو اپنی طرف بلا کر 15برگر فوری لگانے کا حکم جاری کیا جس پر نوید نے ملازمین سے برگروں کے پیسے مانگے تو گاڑی کی فرنٹ سیٹ پر براجمان اے ایس آئی ظفر طیش میں آگیا جس نے گاڑی سے باہر نکلتے ہی دکاندار کو تھپڑ مارنے شروع کر دئیے جبکہ دکاندار کے پاس کھڑے سکیورٹی گارڈ کو بھی ’’نکے تھانیدار ‘‘ نے دھکے مارے، تاہم مفت برگر نہ ملنے پر سیخ پا ہونیوالا مذکورہ اے ایس آئی زبردستی دکان بند کروا کر تھانے کی جانب روانہ ہو گیا، ادھر پو لیس ذرائع کا کہنا ہے کہ ملازمین کا اس دکاندار سے مفت برگر کھانا کوئی نئی بات نہیں۔ دوسری جانب سٹی پولیس آفیسر محمد وقاص نذیر نے برگر شاپ کے مالک پر تشدد کرنیوالے اے ایس آئی محمد ظفر کیخلاف سخت ایکشن لیتے ہوئے اسے فوری طورپر معطل کر دیا اور ایس پی سول لائنز محمد ندیم کھوکھرکو انکوائری آفیسر مقرر کر کے رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کر دی۔