حافظ آباد: 3سال پہلے لاپتہ زمیندار کے قتل کا سراغ مل گیا، بیوی نے مارا

16 مئی 2016

حافظ آباد (نمائندہ نوائے وقت)حافظ آباد کے نواحی قصبہ سوئیانوالہ میں قریباً تین سال قبل پراسرار طریقہ سے لاپتہ ہونے والے زمیندار کے اندھے قتل کا سراغ مل گیا۔ زمیندار کی اپنی بیوی ہی اسکی قاتلہ نکل آئی جس پر پولیس نے زمیندار کے ملازم، بیوی اور اسکی دو سالیوں کو گرفتار کرکے تفتیش شروع کردی۔ دوران تفتیش یہ بات سامنے آئی کی زمیندار انعام اﷲ چٹھہ جو کہ دو بچوں کا باپ تھا۔ اسکے گھر اسکی دو سالیاں کرن اور ارم بھی رہائش پذیر تھیں۔ جن کے کردار پر وہ اکثر اپنی بیوی شکیلہ سے شاکی رہتا تھا اور ان کے مابین توں تکرار ہوتی رہتی تھی۔ بیوی شکیلہ نے انعام اﷲ چٹھہ سے نجات حاصل کرنے کے لئے اسکے ملازم طارق سکنہ جڑانوالہ فیصل آباد سے ملکر منصوبہ بندی کی۔ جس کے تحت شکیلہ نے اپنی دونوں بہنوں کرن اور ارم کے ہمراہ انعام اﷲ چٹھہ کو نشہ آور چیز پلا دی بعدازاں ان تینوں نے اپنے ملازم طارق سے ملکر انعام اﷲ چٹھہ کی نعش کو قریبی نہر میں پھینک دیا۔ جس کے بعد بیوی نے اغوا کا ڈرامہ رچا دیا۔ تھانہ ونیکے تارڑ حافظ آباد میں ایف۔آئی ۔آر درج کروائی گئی۔ اب مذکورہ قتل کا بھانڈا پھوٹنے پر پولیس نے انعام اﷲ چٹھہ کی بیوی شکیلہ، اسکی دو سالیوں کرن، ارم اور ملازم طارق کو گرفتار کرلیا ہے۔ حقائق سامنے آنے پر مقتول انعام اللہ چٹھہ کی غائبانہ نماز جنازہ اُن کے آبائی گائوں سوئیانوالہ میں ادا کی گئی جس میں اہل علاقہ سمیت معززین کی کثیر تعداد نے بھی شرکت کی۔