افغانستان میں آپریشن‘ بم دھماکے‘ 14 طالبان شہید‘ 9 شہری جاں بحق

16 مارچ 2010
کابل (اے ایف پی) افغانستان میں آپریشن اور بم دھماکوں سے 14 طالبان شہید اور 9 شہری جاں بحق ہو گئے۔ پاک افغان سرحدی پٹی پر آپریشن میں 9 طالبان شہید ہو گئے۔ نیٹو فورسز کی جانب سے ایک گھر میں چھاپہ مارا گیا اور ایک مشتبہ شخص در محمد کو گرفتار کرکے اپنے ساتھ لے گئے۔ نیٹو فورسز کا اس وقت برانچہ، رباط میں آپریشن جاری ہے۔ آپریشن میں ٹینک اور ہیلی کاپٹر حصہ لے رہے ہیں۔ دوسری طرف جنوبی افغانستان میں امریکی ڈرون ٹیک آف کے وقت تباہ ہو گیا۔ افغان صوبہ پکتیکا میں سکیورٹی فورسز نے سرکاری عمارتوں میں خودکش حملوں کی کوشش ناکام بناتے ہوئے 5 طالبان کو شہید کر دیا۔ پیر کے روز افغان سکیورٹی فورسز نے پانچ خودکش حملہ آوروں کو اس وقت فائرنگ کرکے شہید کر دیا جب وہ مبینہ طور پر خودکش جیکٹس پہنے ہوئے ایک سرکاری عمارت پر حملے کی کوشش کر رہے تھے تاہم وہ ٹارگٹ پر نہ پہنچ سکے۔ خودکش حملہ آوروں اور پولیس کے درمیان فائرنگ کا شدید تبادلہ بھی ہوا۔ دوسری جانب افغانستان میں اتحادی افواج کے ہیڈکوارٹر بگرام ایئرفیلڈ پر طالبان کی جانب سے ایک راکٹ داغا گیا جس سے ایک شخص ہلاک ہو گیا۔ دریں اثناءقندھار میں بارودی سرنگ دھماکے سے 6 اور غزنی میں 3 شہری جاں بحق ہو گئے۔ ٹریفک حادثے میں زخمی ہونیوالا اتحادی فوجی دم توڑ گیا۔ کرزئی نے قندھار میں مزید سکیورٹی فورسز تعینات کرنے کا حکم دیدیا۔