لاہور : میڈیا فروغ تعلیم کیلئے تحریک چلائے : حمید نظامی پریس انسٹیٹیوٹ میں سیمینار

16 مارچ 2010
لاہور (کلچرل رپورٹر) پاکستان تعلیمی شعبہ میں بہت پسماندہ ہے، امریکہ میں تعلیم کے لےے 7 فیصد جبکہ پاکستان میں بجٹ میں صرف دو فیصد رقم مختص کی جاتی ہے۔ میڈیا فروغ تعلیم کے لےے تحریک چلائے ۔ ان خیالات کا اظہار مقررین نے حمید نظامی پریس انسٹی ٹیوٹ آف پاکستان کے زیراہتمام ” فروغ تعلیم اور میڈیا کی ذمہ داریاں“ کے موضوع پر سیمینار میں کیا۔ یہ سیمینار ٹیکسٹ بک ڈوےلپرزاور ایسوسی ایشن فار اکیڈمک کوالٹی (آفاق) کے تعاون سے منعقد کیا گیا۔ سیمینار کی صدارت وزےر تعلیم میاں مجتبیٰ شجاع الرحمن نے کی۔ وائس چانسلر پنجاب یونیورسٹی ڈاکٹر مجاہد کامران اور چیئرمین ایسوسی ایشن فار اکیڈمک کوالٹی (آفاق) ڈاکٹر حسن صہےب مراد مہمانان خصوصی تھے۔ مقررین میں پی ٹی وی لاہور شعبہ حالات حاضرہ کے سربراہ ضیاءالرحمان امجد، ایگزیکٹو ڈائریکٹر (آفاق) شاہد وارثی، پروفیسر لاءکالج محمد زبیر سعید، انچارج تعلیمی صفحہ نوائے وقت عنبرین فاطمہ تھے۔ نظامت کے فرائض ڈائریکٹر حمید نظامی پریس انسٹی ٹیوٹ آف پاکستان ابصار عبدالعلی نے انجام دیئے۔ تلاوت قرآن پاک کی سعادت قاریہ آمنہ ذوالفقار نے حاصل کی، صوبائی وزیر تعلیم میاں مجتبیٰ شجاع الرحمان نے کہا وزیراعلیٰ شہبازشریف کی پہلی ترجیح تعلیم ہے، ہم نے اپنے پہلے بجٹ میں تعلیم کے لےے رقم 60 فیصد بڑھا دی۔ اس کے علاوہ دو ارب روپے سے انڈومنٹ فنڈ قائم کیا۔ اس فنڈ میں ہر سال 2 ارب روپے کا اضافہ ہوتا ہے۔ اب یہ چار ارب ہو چکا ہے۔ مجاہد کامران نے کہا کہ پاکستان میں تعلیم کے شعبے کو اہمیت نہیں دی گئی، دنیا کے دیگر ممالک کی نسبت بہت کم بجٹ رکھا جاتا ہے۔ امریکہ میں کل قومی پیداوار کا 7 فیصد تعلیم کے لےے مختص کیا جاتا ہے، جبکہ ہمارے ہاں کل قومی پیداوار کا صرف 2 فیصد مختص کیا جاتا ہے اور یہ 2 فیصد بھی خرچ نہیں کیا جاتا۔ حکومت تعلیم کے لےے کم از کم چار فیصد مختص کرے۔ ڈاکٹر حسن صہیب مراد نے کہا کہ آبادی کا ایک بڑا حصہ ناخواندہ ہے، کئی بچے سکولوں تک نہےں پہنچتے ۔ میڈیا والوں کو چاہےے کہ وہ مہم چلائیں، ضیاءالرحمان امجد نے کہا جب تک مسلمان تعلیم حاصل کرتے رہے اس وقت دنیا میں ہمارا ڈنکا بجتا رہا، جب علم سے دور ہوئے تو ہم دنیا سے بہت پیچھے رہ گئے۔ شاہد وارثی نے کہا اگر میڈیا بحر تعلیم میں کود پڑے تو ہم بھی دنیا کی عظیم قوم بن سکتے ہیں۔ پروفیسر زبیر سعید نے کہا اچھی کتاب تب ہی آئے گی جب اس پر سرکاری کنٹرول ختم ہو گا۔ پنجاب میں نئی ٹیکسٹ بک بورڈ پالیسی کے تحت نئی کتابیں آرہی ہیں۔ یہ بین الاقوامی معیار کی کتابیں ہیں۔ عنبرین فاطمہ نے کہا فروغ تعلیم میں نوائے وقت نے اہم کردار ادا کیا ہے۔ نوائے وقت کو سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کا مکمل صفحہ شروع کرنے کا اعزاز حاصل ہے۔ابصار عبدالعلی کہا کہ تعلیم آدمی کو انسان بناتی ہے جو آدمی تعلیم حاصل کرنے کے باوجود بھی انسان نہیں بنتا وہ اپنے خاندان، معاشرہ اور ملک کے بگاڑ کے سبب ضرور بنتا ہے۔ اس کا مظاہرہ ہم اپنے ملک اور معاشرہ میں پچھلے 62 برس سے دیکھ رہے ہیں۔